کاکول میں نذرخان کی اندھادھند فائرنگ سے حاجی زاہد کے بھائی سمیت دوزخمی۔


ایبٹ آباد: رمضان المبارک کے دوران گرلزہائی اسکول میں چرس پینے پر۔ نذرخان کی ساتھیوں کے ہمراہ اندھادھند فائرنگ سے حاجی زاہد کے بھائی سمیت دوبھتیجے شدیدزخمی۔ تھانہ میرپور میں مقدمہ درج۔ اس ضمن میں پاکستان مسلم لیگ(ن) کے سابق امیدوار ضلع کونسل یونین کونسل کاکول حاجی زاہد نے تھانہ میرپور میں رپورٹ درج کراتے ہوئے اوربعد ازاں وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ کاکول میں میرے گھر کے قریب لڑکیوں کا ہائرسکینڈری اسکول ہے۔ نماز عصر کے وقت میں اسکول کے قریب سے گزرا تو اسکول کے گراؤنڈ سے چرس کی بوآئی۔ جب میں نے اسکول کی گراؤنڈ میں دیکھا تو وہاں پر گھوڑے کھڑے تھے۔ جبکہ نذرخان ولد اورنگزیب، سجادولد اورنگزیب اور احمد علی ولد ارشاد رمضان المبارک کے دوران چرس پینے میں مصروف تھے۔ جس پر میں نے ویلج کونسل کاکول کے ناظم ناصر خان کو بلایا۔ ناصرخان نے ان لوگوں کی موبائل فون میں تصاویر بنائیں۔ اور کہا کہ آپ کس کی اجازت سے گرلز اسکول میں بیٹھے ہوئے ہیں؟ ہم گرلز اسکول کی پرنسپل سے اس مسئلہ پر بات کریں گے۔ ان لوگوں سے بات چیت کرنے کے بعد ہم واپس آگئے۔

حاجی زاہد کے مطابق افطار سے چند منٹ قبل نذرخان جدون نے اپنے بھائی اوراحمد علی کے ہمراہ میرے ساتھ جھگڑا کیا اور پھر ان لوگوں نے میرے گھر پر فائرنگ شروع کردی۔ جس کی اطلاع تھانہ میرپورکو دی۔ لیکن تھانہ میرپور کے اہلکاروں نے کہاکہ پولیس چوکی جناح آباد سے رابطہ کیاجائے۔ اس دوران میرا بھائی حاجی فواد خان اور دوبھتیجے ذیشان عرف شانی اور احتشام زعرف شامی پسران جہانزیب خان موقع پر آئے تو نذر خان اوراس کے بھائی سجاد اوراحمد علی نے ان پر اندھا دھندفائرنگ شروع کردی۔ جس کے نتیجے میں تینوں گولیاں لگنے سے زخمی ہوگئے۔ فائرنگ کے بعد ملزمان موقع سے فرار ہو گئے۔ جبکہ زخمیوں کو ایوب ٹیچنگ ہسپتال منتقل کردیاگیاہے۔ واقع کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی میرپور سرکل اور ایس پی پولیس کی نفری کے ہمراہ ایوب ٹیچنگ ہسپتال پہنچ گئے۔ جبکہ دوسری جانب ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔ ملزمان کیخلاف اقدام قتل کی دفعات کے تحت ایف آئی آر بھی درج کرلی گئی ہے۔


Comments

comments