اوئی کواڑی۔ اوئی بنجا۔


ایبٹ آباد:اوئی کواڑی۔ اوئی بنجا۔ پی ٹی آئی کے ضلعی صدر نقیب اللہ خان ڈٹ گئے، ضلع کونسل میں خواتین کی مخصوص نشستوں پرجعلی نامزدگیوں کیخلاف الیکشن ٹریبونل سے رجوع کر نے کا اعلان، گذشتہ روز پشاور ہائیکورٹ ایبٹ آباد بنچ میں دائر رٹ پیٹشن کی سماعت کے دوران معزز جج نے الیکشن کمیشن کی جانب سے نوٹیفیکشن کے اجراء ہو جانے کے پیش نظر درخواست گذار کو ہدائیت کی کہ وہ الیکشن ٹریبونل سے رجوع کریں ۔جس پر ضلعی صدر پاکستان تحریک انصاف نے نوٹیفیکشن کی منسوخی کیلئے الیکشن ٹریبونل میں رٹ پیٹیشن دائر کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے عہدیداران اور کارکنان بھی عدالت کے احاطے میں موجود تھے ۔

صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے نقیب اللہ خان نے کہا کہ یہ کوئی زاتی لڑائی نہیں بلکہ پارٹی تنظیموں کے دائرہ کار، اختیارات اور ورکرز کے حقوق کی جنگ ہے۔انفرادی اور گروہی مفادات پر مبنی فیصلوں سے پہلے ہی پارٹی کو اور ایبٹ آباد کے عوام کو ناقابل تلافی نقصان پہنچاہے ۔ اپنے اور کارکنوں کے آئینی اور قانونی حق کیلئے ہر دروازہ کھٹکھٹائیں گے ۔ واضح رہے کہ ضلع اور تحصیل کونسل کی خالی ہونے والی مخصوص نشستوں پرنامزدگیوں کے اقدام کو جعلی اور غیر آئینی قرار دیتے ہوئے پی ٹی آئی کی ضلعی تنظیم نے ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ پارٹی آئین اور قواعد و ضوابط کی سراسر خلاف ورزی کی گئی ہے اورمرکزی سیکرٹری جنرل کی ہدایات کی نفی کرتے ہوئے ایک غیر آئینی لسٹ جمع کرائی گئی جسے جمع کرانے والوں کو ایسا کرنے کا کوئی اختیار نہیں مذکورہ لسٹ سے ضلعی اور تحصیل تنظیموں کو قطعی لاعلم رکھا گیاہے لہذا اس لسٹ کو منسوخ کیا جائے۔ پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل ارشدداد کی جانب سے جاری نوٹیفیکشن کے مطابق ضلعی صدورکو ٹکٹوں کے فیصلے کا اختیار دیا گیاہے۔


Comments

comments