تعلیمی بورڈ نے انٹرمیڈیٹ نتائج اقرباء پروری کی انتہاء کردی۔ پیس گروپ میں ریکارڈ بائیس پوزیشنوں کی تقسیم۔ 


ایبٹ آباد:تعلیمی بورڈ نے اقرباء پروری کی انتہاء کردی۔ انٹرمیڈیٹ کے سالانہ نتائج میں پیس گروپ میں ریکارڈ بائیس پوزیشنوں کی تقسیم۔ ایبٹ آباد کے شہریوں نے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے دھاندلی قرار دیتے ہوئے حساس اداروں اور صوبائی حکومت سے تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے عمران خان سے سخت نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔ اس ضمن میں ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ دوماہ قبل پیس گروپ کی جانب سے خلاف قانون ایبٹ آباد کے تعلیمی بورڈ میں جہاد خان نامی شخص کو کنٹرولر امتحانات تعینات کروایاگیا۔ جن کے بارے میں کہاگیاہے کہ ان کو اسد قیصر کی خصوصی سفارش پر ٹیسٹ میں ناکام ہونے کے باوجود ایبٹ آباد بورڈ کا کنٹرولر امتحانات تعینات کیاگیا۔ چیئرمین بورڈ اور کنٹرولر امتحانات نے اقرباء پروری کی انتہاء کرتے ہوئے انٹرمیڈیٹ کے سالانہ نتائج میں صرف پیس گروپ کو بائیس پوزیشنیں عطاء کردیں۔جبکہ دن رات محنت کرنے والے مستحق طلباء منہ دیکھتے رہ گئے۔

واضح رہے کہ ہر سال ایبٹ آباد بورڈ میں پوزیشنیں حاصل کرنیوالے طلباء و طالبات کی اکثریت انجینئرنگ اور میڈیکل کے ٹیسٹوں میں ناکام ہو جاتی ہے۔ جس کا خمیازہ طلباء و طالبات کیساتھ ساتھ ان کے والدین کو بھی بھگتنا پڑتاہے۔ شہریوں نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سے مطالبہ کیاہے کہ اس بوگس تعلیمی نظام کا خاتمہ کرتے ہوئے ایسا طریقہ کار اختیار کیاجائے کہ صرف حقیقی لائق طلباء ہی سامنے آسکیں۔ من پسند اداروں کو نوازنے والوں کیخلاف سخت کارروائی کی جائے۔

تعلیمی بورڈ کی جانب سے جاری کئے جانیوالے سالانہ نتائج کے مطابق کل 37626 طلباء نے سالانہ امتحان میں حصہ لیا۔ جن میں سے 25953پاس، 1127 نے اے ون گریڈ، 3079 نے اے گریڈ،5460 نے بی گریڈ، 8929 نے سی گریڈ میں کامیابی حاصل کی۔ جبکہ کامیابی کا تناسب 68.98 فیصد رہا۔ سالانہ نتائج کے مطابق نجی کالج کی طالبہ صباحت صفدر نے بورڈ میں پہلی، اسی کالج کی لائبہ بہرام نے دوسری،، نجی کالج کی عیشاء آصف اورکشمالہ میرنے تیسری،اقراء فیاض نے چوتھی، ہمرانوید اورحسن علی عباسی نے پانچویں، نمراخان نے چھٹی، فاطمہ رمضان نے ساتویں، عروج کلیم نے آٹھویں، عائشہ رفیع نے نویں، گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج نمبرون ایبٹ آباد کے اسد علی اور نجی کالج کی وجیہہ طیب نے دسویں، نجی کالج کی مصباح منیر اور زینب کلیم نے گیارہویں، فریحہ گل اور تعمیروطن کے مصائدزیب نے بارہویں، اقصاء بی بی اور حفصاء وقار نے تیرہویں، ثناء گل شاہ اور پاکستان سکاؤٹ کیڈٹ کالج بٹراسی مانسہرہ کے محمد علی نے چودہویں، عمینہ ریاض اور لائبہ آصف نے پندرہویں، نصیبہ نے سولہویں، نمرااقبال ، عائشہ عبدالسلام ، ایبٹ آباد پبلک اسکول اینڈ کالج کے سیّد اسد علی شاہ، اور وردہ ذوالحج نے سترہویں، ایمن خان ، منیب الرحمن ، صومہ سفیر اورسیّدہ سعدیہ تاویل نے اٹھارہویں،مقدس ہاشمی نے انیسویں ، سائرہ مقدس خان اور ذیشان طاہر نے بیسویں پوزیشنیں حاصل کیں۔ ایبٹ آباد پبلک اسکول اینڈ کالج کے سیّداسد علی شاہ نے پری میڈیکل میل گروپ میں دوسری، گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج ایبٹ آباد کے اسد علی نے پری انجینئرنگ گروپ میں اوّل، تعمیر وطن پبلک اسکول کے مصائد زیب نے دوسری اور پاکستان سکاؤٹ کیڈٹ کالج بٹراسی کے طالبعلم محمد علی نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔ ہیومینٹیز گروپ میں گورنمنٹ ہائر سکینڈری اسکول سرائے صالح کے معذور طالبعلم ملک فیصل نے اوّل، حمزہ نے دوسری اور پرائیویٹ طالبعلم عبدالحق نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔


Comments

comments