ایبٹ آبادسمیت ہزار بھر کے اراکین اسمبلی کی نااہلی کی وجہ سے خیبرپختونخواہ کے بجٹ میں سب سے کم ترقیاتی بجٹ ہزارہ کو ملا۔ ہزارہ میں ہری پور سب سے زیادہ فنڈز حاصل کرنیوالا ضلع جبکہ بٹگرام سب سے کم ترقیاتی بجٹ لینے والاضلع بن گیا۔ بنوں، ڈیرہ اسماعیل خان، ہنگو، کرک، کوہاٹ صوبے میں بجٹ کا بڑاحصہ خرچ کیاجانے لگا۔

گرلزکالج کے باہردوبارہ سبزی منڈی لگادی گئی۔ ٹی ایم اے کااہلکار یومیہ پانچ سوروپے بھتہ وصول کرنے میں مصروف۔ایبٹ آباد شہرمیں تجاوزات مافیا کاراج برقرار۔ لنک روڈ، چوکوں چوراہوں پر قبضہ مافیا کو تحصیل حکومت کی مکمل سپورٹ۔تین سیاسی جماعتوں پر مشتمل تحصیل کونسل کے ممبران کی بے بسی سوالیہ نشان بن گئی؟

وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ کاڈسٹرکٹ کونسل ایبٹ آباد کے منجمد فنڈزاراکین اسمبلی کے ذریعے استعمال کرنے کا حکم۔ممبرضلع کونسل بلال اکبرخان نے مستعفی ہونے کی دھمکی دیدی۔ وزیراعلیٰ کو غیرقانونی اقدامات کرنے کا کوئی اختیار نہیں: ضلع ناظم سردار شیربہادر۔