سی پیک منصوبہ۔ ایبٹ آباد اورمانسہرہ کے شہریوں کیلئے بڑی خوشخبری سامنے آگئی۔


ایبٹ آباد:سی پیک منصوبہ۔ ایبٹ آباد کے شہریوں کیلئے بڑی خوشخبری سامنے آگئی۔ چائنیزحکومت شاہراہ ریشم کی توسیع کے علاوہ فوارہ چوک تا حویلیاں بائی پاس روڈ بھی بنا کردے گی۔ حویلیاں تا مانسہرہ سیکشن جون 2019ء تک مکمل ہونے کی نویدبھی سنادی گئی۔ ایبٹ آباد، مانسہرہ، مظفرآباد اور گلگت سی پیک کے اہم شہروں میں شامل کرلئے گئے۔ اس ضمن میں سی پیک ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ چائنیز حکومت نے ایبٹ آباد، مانسہرہ، مظفرآباد اور گلگت کو سی پیک منصوبے کے اہم ترین شہروں میں شامل کرلیاہے۔ چائنیز حکومت ان شہروں میں متبادل سڑکوں وغیرہ کی تعمیر بھی کرے گی۔ جس کے بعد ان شہروں کو موٹرویز کے نیٹ ورک کیساتھ منسلک کرنے کے ساتھ ساتھ وہاں پر متبادل سڑکیں بھی بنائی جائیں گی۔

ABBOTTABAD: Apr28 – Ambassador People Republic of China Mr. Yao Jing cutting cake during 10th Anniversary of Sisters City MOU Kashghar – China & Abbottabad. ONLINE PHOTO by Sultan Dogar

سی پیک ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ ایبٹ آباد اورمانسہرہ کو سی پیک کے اہم شہر میں شامل کرنے کے کی وجہ سے ایبٹ آباد کے لوگوں کی سفری مشکلات سو فیصد ختم ہوجائیں گی۔ سی پیک منصوبے کے تحت ہزارہ موٹروے کا حویلیاں تا مانسہرہ سیکشن جون 2019ء میں مکمل کرلیا جائے گا۔ جس کے بعد شاہراہ ریشم سے ٹریفک ہزارہ موٹروے پر ڈائیورٹ ہونے کے بعد شاہراہ ریشم کی توسیع کی جائے گی۔ اس کے علاوہ فوارہ چوک ایبٹ آباد تا حویلیاں تک ایک الگ بائی پاس سڑک سی پیک روٹ کے ساتھ ساتھ اورہیڈ فلائی پر تعمیر کی جائے گی۔ جس کا سروے بھی مکمل کرلیا گیاہے۔ ایبٹ آباد میں شاہراہ ریشم کی توسیع اور متبادل بائی پاس روڈنہ تو مسلم لیگ(ن) ،نہ پی ٹی آئی اور نہ ہی پیپلزپارٹی کا کارنامہ ہے۔ بلکہ سی پیک کے لئے متبادل روٹ چائنیز حکومت کی ضرورت ہے۔ سی پیک (ہزارہ موٹروے) پر کسی وجہ سے ٹریفک معطل ہونے کی صورت میں چائنہ سے آنے والے مال بردار ٹرک ان متبادل سڑکوں سے گزریں گے۔ کیونکہ سی پیک مکمل ہونے کے بعد اس کی سیکورٹی اور اس پر چلنے والی ٹریفک انتہائی اہمیت کی حامل ہوگی۔ ہزارہ میں جولوگ اور سیاسی جماعتیں شاہراہ ریشم پر احتجاج کو اپنا حق سمجھتی ہیں۔ شاہراہ ریشم کی توسیع اور چائنہ کی ٹریفک چلنے کے بعد کسی کو ایک منٹ کیلئے بھی شاہراہ ریشم پر احتجاج کی اجازت نہیں دی جائے گی اور احتجاج کرنے والوں کیساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔

ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو مزید بتایاکہ ایبٹ آباد اور مانسہرہ میں شاہراہ ریشم کی توسیع کیلئے چائنیز حکومت اور این ایچ اے کے حکام نے سروے مکمل کرلیاہے۔ جون2019ء میں سی پیک (ہزارہ موٹروے ) پر ٹریفک چلنے کے بعد مانسہرہ اور ایبٹ آباد میں شاہراہ ریشم کی توسیع اور ایبٹ آباد میں فوارہ چوک تا حویلیاں جدید ترین بائی پاس روڈ کی تعمیر کاکام بھی شروع کردیا جائے گا۔

ABBOTTABAD: Apr28 – Chinese Citizen shouting slogans during Football Match among Chinese Embassy & DG Sports KP Eleven in Abbottabad. ONLINE PHOTO by Sultan Dogar

Comments

comments