سات رکنی کمیٹی نے تحصیل ناظم اسحاق سلیمانی کیخلاف کرپشن کی تحقیقات مکمل کرلیں۔


ایبٹ آباد:تحصیل کونسل کا گرما گرم اجلاس، تحصیل ناظم محمد اسحاق زکریا کرپشن الزامات سے بری الذمہ قرار دے دئیے گئے، تحصیل کونسل کی سات رکنی کمیٹی نے جناح پلازہ، طیب اردگان پلازہ، پنڈ کر گو خان سمیت تمام سکیموں کا مشاہدہ اور انکوائری کی تاہم کمیٹی کو کرپشن کا کوئی شواہد حاصل نہ ہو سکا، تحصیل ناظم نے شفافیت کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف ایبٹ آباد کی تعمیر و ترقی میں کلیدی کردار ادا کیا جبکہ جناح پلازہ میں ٹھکے میں ادارے کو پانچ کروڑ 65 لاکھ کی بچت ہوئی، اراکین کمیٹی کا تحصیل کونسل میں برملا اعتراف، دیانتداری سے فرائض سرانجام دی اور ادارے کے وسائل کے تحفظ کو ہمیشہ ترجیح دی، کمیٹی کا اعتراف شرپسندوں کیلئے واضح پیغام ہے، اختلافات بھلا کر باہم مل جل کر ایبٹ آباد کو مثالی تحصیل بنانے کیلئے ممبران کونسل کردار ادا کریں ناظم محمد اسحق زکریا کا خطاب۔

ذرائع کے مطابق تحصیل کونسل کا ہنگامی اجلاس زیر صدارت کنونئیر سردار شجاع احمد کی صدارت میں ضلع کونسل ہال میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں تحصیل ناظم پر کرپشن کے حوالے سے عائد الزامات کی انکوائیری کمیٹی نے اپنی رپورٹ پیش کی۔ جس کے دوران مجتبی حسن، عارف تنولی، امبر ایڈووکیٹ، ملک وسیم، راشد خان، سردار شیردل اور حاجی سلطان اعوان نے ایوان کو بتایا کہ ایم اینڈآر کا ٹینڈر دو کروڑ کا ہوا۔ جبکہ فنڈز کی کمی کی وجہ سے منظوری ایک کروڑ کی گئی، جس کا ذیادہ حد ٹی ایم اے دفاتر کی مرمتی میں خرچ کیا گیا جبکہ اس فنڈ سے پنڈ کر گو میں کوئی منصوبہ شروع نہ کیا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جناح پلازہ کی تعمیر کا ٹینڈر قبل ازیں چار فیصد زائد پر بدیع الزمان اینڈ کو جاری کیا گیا جس سے تحصیل کونسل نے ٹھیکیدار موصوف سے متعدد درخواستیں کیں تاہم ریٹ کم کرنے پرکوئی شنوائی نہ ہو سکی جس پر تحصیل ناظم نے ٹھیکہ منسوخ کرتے ہوئے دوبارہ ٹینڈر طلب کئے اور نجیب اللہ اینڈ کو نے 7.30فیصد بلیو پر ٹھیکہ حاصل کیا جس سے تحصیل کونسل کو پانچ کروڑ 65لاکھ خطیر فنڈ کی بچت ہوئی، انہوں نے مزید کہا کہ طیب اردگان پلازہ کی چھت کی چار بار نیلامی کی گئی، جس کے تحت پہلی مرتبی ستر لاکھ روپے میں نیلامی ہوئی دوسری مرتبہ کسی نے حصہ نہیں لیا، تیسری مرتبہ 72 لاکھ میں نیلامی کی گئی اور چوتھی مرتبہ بھی کسی نے نیلامی میں حصہ نہیں لیا، جس پر تحصیل کونسل نے 72لاکھ کی نیلامی کو فائنل کر دیا جس سے کسی قسم کی بے قاعگی نہیں ہوئی، انہوں نے کہا کہ طیب اردگان پلازہ کے فلیٹس کی سرکاری بولی دس لاکھ مقرر تھی تاہم کسی نے بھی مقررہ بولی سے زائد نہ دی جبکہ دس لاکھ سے کم بولی کی وجہ سے نیلامی منسوخ کر دی گئی۔

کمیٹی نے برملا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ طیب اردگان پلازہ،جناح پلازہ سمیت ترقیاتی منصوبوں میں کسی قسم کی کرپشن کے شواہد حاصل نہ ہوسکے اور تمام کام میرٹ اور شفافیت سے مکمل کیا گیا جس پر کمیٹی نے تحصیل ناظم محمد اسحاق زکریا کو کرپشن الزامات سے بری الازم قرار دے دیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے تحصیل ناظم محمد اسحاق زکریا نے کہا کہ تمام تر سرکاری قوم قوائد و ضوابط کے مطابق اور ترجیحات کو مد نظر رکھ کر خرچ کیا جا رہا ہے، جبکہ پنڈ کر گو خان میں کوئی فنڈاستعمال نہیں کیا گیا، انہوں نے کہا کہ کرپشن الزامات کی بازگشت پر خود کو احتساب کیلئے پیش کیا اور تحصیل کونسل کی مشاورت سے انکوائری کمیٹی قائم کی، اور کسی بھی تحقیق میں اثر اندازنہ ہونے کی بناء پر دس روز کیلئے عہدے کو خیر آباد کہہ دیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ پی ایف سی فنڈ کی تقسیم کیلئے الگ کمیٹی قائم کر رکھی ہے اور میرٹ اور ترجیحات کو مد نظر رکھ کر فنڈز کی تقسیم کی ذمہ دار ہے، انہوں نے کہا کہ ترقیاتی کاموں اورپلازہ جات سے نہ صرف عوام کو روزگار کے مواقع حاصل ہونگے بلکہ ادارہ کو بھی مسلسل معقول آمدن حاصل ہو گی، انہوں نے دعوی کیا کہ ایبٹ آباد کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سب سے ذیادہ ترقیاتی کام مکمل ہوئے، جو موجودہ تحصیل کونسل کا منفرد اعزاز ہے، بعدازاں کنوئیر سردار شجاع احمد نے اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دیا۔


Comments

comments