ملک صفدرنے پی ٹی آئی کایوسی کٹھوال کا ٹکٹ چھین لیا۔


ایبٹ آباد:ایبٹ آباد ضمنی بلدیاتی انتخابات میں پی ٹی آئی نے یوسی کھٹوال سے سابق ایم پی اے مرحوم ملک گوہر الرحمن کے صاحبزادے اور پی ٹی آئی کے رہنما و سابق ممبر ضلع کونسل ملک صفدر کے چچا زاد ملک معروف کو ٹکٹ دے دیا ہے جبکہ اسی یو سی سے مسلم لیگ ن نے سید محبوب شاہ کو ٹکٹ جاری کر دیا ہے پی ٹی آئی کے تمام تر اختلافات اور مقامی قیادت کی مخالفت کے باوجود پی ٹی آئی نے یو سی کھٹوال کی ضلع کونسل کی نشت پر ٹکٹ کا فیصلہ ملک معروف کے حق میں کر دیا ہے جس سے علاقہ کی سیاست ڈرامائی صورتحال اختیار کر گئی ہے پی ٹی آئی نے حالیہ انتخابات میں پی ٹی آئی کے سابق ضلع ممبر ملک صفدر کو پی کے 39کا ٹکٹ نہیں دیا تھا جس پر انہوں نے اس حلقہ سے پی ٹی آئی کے امیدوار و سپیکر صوبائی اسمبلی مشتاق احمد غنی کے مقابلے میں الیکشن لڑا تھا جس کی وجہ سے پی ٹی آئی کی مقامی قیادت ملک صفدر کے خاندان کی مخالفت کر رہی تھی مگر اس کے باوجود مذکورہ خاندان نے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے یو سی کھٹوال کی ضلع کونسل کی نشت کا ٹکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے جس سے ایک بار پھر پی ٹی آئی اختلافات کا شکار ہو گئی ہے۔

یونین کونسل نگری بالا کی ویلج کونسل IIسے سردار محمد شبیر بلا مقابلہ ویلج کونسلر منتخب

ایبٹ آباد:ضمنی بلدیاتی انتخابات میں یونین کونسل نگری بالا کی ویلج کونسل IIسے سردار محمد شبیر بلا مقابلہ ویلج کونسلر منتخب ہو گئے ہیں اور ان کے مقابلے میں تینوں امیدواروں نے دستبرداری کا اعلان کر دیا ہے یہ فیصلہ علاقہ کے مقامی جرگہ میں کیا گیا جس میں ویلج کونسل ٹو کے ممبران ویلج کونسل سردار فضل رحیم، سردار ولی الرحمن، سردار محمد داؤد، سردار گل خطاب ودیگرعمائدین علاقہ جن میں سردار مسعود الرحمن، سردار محمد تاج، سردار محمد اورنگزیب، سردار فضل الرحمن، محمد داؤد، ماسٹر اعظم، سردار عبدالرشید، سردار محمد رفیق، سردار بشیر، سردار عبدالقیوم بھی شریک تھے اس موقع پر23دسمبر کو ہونے والے ضمنی انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں سردار عبدالقیوم، سردار محمد بشیراور سردار عبدالقدوس نے سردار محمد شبیر کے حق میں دستبرداری کا اعلان کر دیا جس کے بعد سردار محمد شبیر وی سی ٹو سے بلا مقابلہ کونسلر منتخب ہو گئے ہیں ۔

یاد رہے کہ بلا مقابلہ منتخب ہونے والے کونسلر کے والد سردار محمد رمضان وفات پا گئے تھے جو مذکورہ وی سی کے ناظم تھے اور انہوں نے2015میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی تھی اور وہ اپنے علاقہ میں سابقہ بلدیاتی ادوار میں ہمیشہ کونسلر منتخب ہوتے چلے آ رہے تھے جن کی وفات کے بعد یہ نشت خالی ہوئی تھی جس پر 23دسمبر کو بلدیاتی انتخابات ہونے تھے اس موقع پر دستبردار ہونے والے کونسلرز نے کہا کہ ہم نے علاقہ کے وسیع تر مفاد اتفاق و اتحاد کو مد نظر رکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا ہے جس کے آنے والے وقت میں اچھے اور مثبت نتائج برآمد ہونگے علاقہ میں تعمیر و ترقی ہو گی اور اتفاق و اتحاد کو مزید تقویت ملے گی۔


Comments

comments