کھلابٹ میں پنجاب پولیس نے چارڈاکوماردیئے۔چھ اہلکارگرفتار۔


ہری پور(وائس آف ہزارہ)پنجاب پولیس نے بغیر اجازت ہری پور میں داخل ہوکر چار مبینہ ڈاکو پولیس مقابلہ میں مار ڈالے مقابلہ میں دو اہلکار زخمی ہوگے لاشوں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ ہری پور پولیس نے پنجاب پولیس کے چھ اہلکاروں کو بھی گرفتار کرلیا ہے جن سے پولیس مقابلہ کی مزید تحقیقات کی جارہی ہیں ۔

زرائع کے مطابق ہری پور کھلابٹ ٹاؤن شپ کے علاقہ پڈھانہ کے مقام پر موٹر کار نمبر 9761 میں موجود 4 افراد جن میں لال حسین،کرم ایجنسی۔محمد اشرف۔کرم ایجنسی جاں بحق منیر حسین کرم ایجنسی اور عبدللہ جوکہ گاوں کیلگ ہری پور کا رہائشی ہے پولیس مقابلہ میں ہلاک ہو گیا ہے ۔جاں بحق پر فائرنگ کے نتیجے میں دو پولیس اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں پنجاب پولیس کی اس کاروائی کے دوران ہری پور پولیس لاعلم رہی فائرنگ کی اوازوں سے شہریوں نے مقامی پولیس کو اطلاع دی جس پر ڈی ایس پی نفری کے کیہمراہ موقع پر پہنچ گے ڈی ایس پی صابر حسین کے مطابق پنجاب پولیس کے چھ اہلکار گرفتار ہیں جبکہ دو ذخمی ہیں ابتدائی تحقیقات کے مطابق موٹر کار میں سوار چار افراد تھانہ سبزی منڈی کے علاقہ سے فرار ہو کر آئیں ہیں ۔جن کا پنجاب پولیس نے دو گاڑیوں پر تعاقب کیا اور ہری پور کے علاقہ کھلابٹ میں پولیس مقابلہ کے دوران جوابی فائرنگ میں چار مبینہ ڈاکوؤں کو ہلاک کر دیا ہے ۔

گاڑی سے تین پستول دیگر اسلحہ کارتوس رسیاں برآمد ہوئی ہیں لاشوں کو ضروری قانونی کاروائی کے بعد ورثاء کے حوالہ کر دیا جائے گا جبکہ پنجاب پولیس نے بغیر اجازت ہری پور میں پولیس مقابلہ کی تحقیقات مزید جاری ہیں تاحال پنجاب پولیس کی گاڑیاں بھی قبضے میں ہیں ہلاک ہونے والے مبینہ ڈاکوؤں کے اہل خانہ کو اطلاع کر دی گی ہے جبکہ پولیس زرائع کے مطابق ہلاک ڈاکو پنجاب پولیس کو ڈکیٹی کی متعدد وارداتوں میں پنجاب کے مختلف علاقوں کی پولیس کو مطلوب تھے تاہم مقابلہ کے دوران پولیس کی گاڑیوں پر فائرنگ کے نشانات نہ ہونا ویران جگہ پر پولیس مقابلہ ہونا اور چاروں افراد کی گاڑی میں ہلاکتیں سوالیہ نشان ہیں جوکہ پولیس مقابلہ کو مشکوک بنا رہے ہیں جن کے جوابات اعلی پولیس حکام ہی دے سکتے ہیں واقعہ کے بعد مذکورہ علاقہ میں مختلف قسم کی چمہ گوئیاں بھی جاری ہیں حقائق کیا ہیں اس کا جواب تو شفاف تحقیقات کے بعد ہی سامنے آئیں گیں تاہم پولیس نے ابتدائی رپورٹ درج کرکے مزید تفتیش شروع کر دی ہے ۔


Comments

comments