ماسٹرنذیر کے بیٹوں نے چاربچوں کے باپ کوقتل کردیا۔


ایبٹ آباد:بچوں کی لڑائی پر ماسٹرنذیر کے بیٹوں نے ٹانچی چوک کے تاجر محمود سلطان کو قتل کردیا۔ ملزمان فرار۔ تاجروں کا ڈی ایچ کیوہسپتال میں شدید احتجاج۔ قاتلوں کی گرفتاری کیلئے چوبیس گھنٹوں کی مہلت۔ اس ضمن میں پولیس اور مقامی ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ البدرکالونی کے رہائشی پینتالیس سالہ محمود سلطان ولد نورعالم ٹانچی چوک میں کاروبار کرتے ہیں۔ اور وہ چاربچوں کے باپ ہیں۔ منگل کے روز بچوں کی لڑائی کے بعد ماسٹرنذیر کے بیٹوں عثمان ،عدنان اور نعمان ،حسنین ولد طارق نے دیگرساتھیوں کے ہمراہ ٹانچی چوک میں محمود سلطان کو زدوکوب کرتے ہوئے شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔ جس کی وجہ سے محمود سلطان کی موقع پر موت واقع ہوگئی۔ جبکہ ملزمان موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ دن دیہاڑے تشدد سے تاجر کے قتل کیخلاف ایبٹ آباد کی تاجربرادری سراپا احتجاج بن گئی۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر محمود سلطان کی لاش کو پوسٹمارٹم کیلئے ڈی ایچ کیوہسپتال منتقل کیا۔ جہاں سینکڑوں کی تعداد میں تاجر بھی پہنچ گئے۔ ذرائع کے مطابق لاش پوسٹمارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کردی گئی ہے۔ جبکہ تھانہ سٹی نے کارروائی کرتے ہوئے ماسٹرنذیر کے تین بیٹوں عثمان، عدنان اور نعمان کے علاوہ حسینین ولد طارق کو بھی گرفتار کرلیاہے۔


Comments

comments