دوسری شادی رچانے پر بیٹوں نے باپ کے ہاتھ پاؤں توڑکرآئی سی یوپہنچادیا۔ 


ایبٹ آباد:دوسری شادی رچانے پر بیٹوں نے باپ کے ہاتھ پاؤں توڑکرآئی سی یوپہنچادیا۔ حویلیاں پولیس ملزمان کیخلاف کارروائی کرنے سے گریزاں۔ اس ضمن میں ڈھیری کیہال کی رہائشی امتیاز بی بی نے صحافیوں کو بتایاکہ دس سال قبل شاہنواز نے پہلی بیوی کی وفات کے بعد اس کیساتھ دوسرانکاح شریعت محمدی کے مطابق کیا۔ جس سے میرا ایک د س سالہ بیٹا بھی ہے۔میرے شوہر کے بیٹوں سجاد خان، امجد خان وغیرہ اپنے باپ پر یہ دباؤ ڈالتے رہے کہ مجھے اور میرے دس سالہ بیٹے کو جائیداد سے حصہ نہ دیاجائے۔ جس پر میرا شوہر انکار کرتاچلا آیا۔ جس پر میرے سوتیلے بیٹوں نے اپنے حقیقی باپ کو شدید تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے اس کے ہاتھ پاؤں توڑ دیئے۔ جوکہ ڈی ایچ کیوہسپتال کے آئی سی یو وارڈ میں زیر علاج ہے۔ ہم نے تھانہ حویلیاں میں مقدمہ کے اندراج کیلئے درخواست دی۔ لیکن ملزمان کا تعلق سیکورٹی فورسز کیساتھ ہونے کی وجہ سے پولیس نے نہ تو ان کیخلاف مقدمہ درج کیاہے اور نہ ہی ان کی گرفتاری کیلئے کارروائی کی جارہی ہے۔امتیاز بی بی نے ڈی آئی جی ہزارہ رینج اور عمران خان سے انصاف کا مطالبہ کیاہے۔


Comments

comments