دودوکانیں سیل: ایف آئی اے نے استعمال شدہ موبائل فون کیخلاف کارروائی شروع کردی۔


ایبٹ آباد:ایف آئی اے کے ہزارہ بھر میں موبائل فون کی دوکانوں پر چھاپے۔سینکڑوں موبائل فون قبضے میں لے لئے۔ ایبٹ آباد میں دو دکانیں سیل کردی گئیں۔ اس ضمن میں ایف آئی اے اور مقامی ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ حساس اداروں نے وفاقی حکومت کو رپورٹ دی کہ دہشت گردی اور دیگر سنگین وارداتوں میں استعمال ہونیوالے موبائل فون کے ای ایم آئی نمبر تبدیل کرکے انہیں دوبارہ فروخت کردیاجاتاہے۔ وفاقی حکومت کے احکامات کے بعد فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے )خیبرپختونخواہ پشاور کی ایک ٹیم نے ہری پور، ایبٹ آباد اور مانسہرہ میں موبائل فون کی دوکانوں پر چھاپے مارے اور ان دوکانوں میں موجود استعمال شدہ سینکڑوں مشتبہ موبائل فون فرانزک تجزیئے کیلئے قبضے میں کرلئے۔

ذرائع کے مطابق لطیف خان پلازہ میں ایف آئی اے اہلکاروں اور مقامی دوکانداروں کے مابین موبائل فون قبضے میں لینے پر جھگڑا ہوا۔ جس پر ایف آئی اے کے اہلکاروں نے غصے میں آکر دو دوکانوں کو سیل کردیا اور ان کے مالکان کو ایف آئی اے ایبٹ آباد کے دفتر میں لے گئے۔ جہاں انہیں کئی گھنٹے بٹھانے کے بعد واپس بھیج دیاگیا۔ تاہم سیل کی جانیوالی دوکانوں کو کھولا نہیں گیا۔ متاثرہ دوکانداروں نے بتایاکہ ایف آئی اے والے جتنے بھی موبائل فون لیکر گئے ہیں۔ ان کی رسیدیں نہیں دی گئیں۔ ہر دوکان سے لاکھوں روپے مالیت کے موبائل فون چیکنگ کے نام پر قبضے میں لئے گئے ہیں۔ اگر یہ موبائل فون فوری طور پر واپس نہ کئے گئے تو پھر تمام دوکاندار اس کیخلاف شدید احتجاج کریں گے۔


Comments

comments