ایوب ٹیچنگ ہسپتال کے ٹی ایم او اورہاؤس آفیسر زبائیومیٹرک حاضری لگانے سے انکاری۔


ایبٹ آباد:ایوب ٹیچنگ ہسپتال کے ٹی ایم او اورہاؤس آفیسر زکی کھلی بدمعاشی ۔بائیومیٹرک حاضری لگانے سے انکاری۔ نجی ہسپتالوں اور کلینکوں میں ڈیوٹیاں کرنے لگے۔ اس ضمن میں ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ ایوب ٹیچنگ ہسپتال میں ٹی ایم او کو ماہانہ ایک لاکھ جبکہ ہاؤس آفیسر کو ماہانہ ساٹھ ہزار روپے تنخواہ ادا کی جاتی ہے۔ہسپتال کے بورڈ آف گورنر نے بائیومیٹرک حاضری کے حوالے سے پالیسی مرتب کررکھی ہے۔ ٹی ایم او اورہاؤس آفیسر اس پالیسی کی کھلم کھلا خلاف ورزی کررہے ہیں۔ اور کوئی بھی ٹی ایم او اورہاؤس آفیسر بائیومیٹرک حاضری نہیں لگارہاہے۔ میڈیکل آفیسرز سمیت تمام ملازمین بائیو میٹرک حاضری باقاعدگی سے لگارہے ہیں۔ بائیومیٹرک حاضری نہ لگانے والے دیگر ملازمین کی نہ صرف تنخواہیں کاٹ لی جاتی ہیں۔ بلکہ ان کی ترقیاں بھی روک لی جاتی ہیں۔

جبکہ دوسری جانب ہسپتال کے بورڈ آف گورنر نے ٹی ایم او اور ہاؤس آفیسر کو بائیومیٹرک حاضری نہ لگانے کی کھلی چھوٹ دے رکھی ہے۔ ٹی ایم او اورہاؤس آفیسر نجی ہسپتالوں اور کلینکوں میں ڈیوٹیاں کررہے ہیں۔ یہ لوگ ہسپتال میں برائے نام ڈیوٹی کرکے غائب ہوجاتے ہیں۔ ایوب ٹیچنگ ہسپتال کے بورڈ آف گورنر نے چپ سادھ رکھی ہے۔ اور بائیومیٹرک حاضری نہ لگانے والے ٹی ایم اوز اور ہاؤس آفیسر کیخلاف کوئی ایکشن نہیں لیاجارہاہے۔ٹی ایم او اورہاؤس آفیسر ہسپتال میں ایک مافیا کا روپ دھار چکے ہیں۔ جنہیں انتظامیہ ڈر کی وجہ سے کچھ نہیں کہہ رہی ہے کہ وہ حاضری لگائیں یا نہ لگائیں۔


Comments

comments