جمیل عباسی قتل کیس: مفرور ساجد کی نامزدگی مسترد۔


ایبٹ آباد:ناظم بانڈی میرا جمیل عباسی کا اندوہناک قتل، پولیس کی طرف سے قتل کی دعویداری کیخلاف کمیٹی ممبران پھٹ پڑے، ایس پی اعجاز گوگا کی سربراہی میں منعقدہ کمیٹی اجلاس میں کسی قسم کی نامزدگی نہیں کی گئی جبکہ ممبران کمیٹی نے پولیس کی تفتیش اور نتائج یکسر مستر دکر دےئے تھے جس کے برخلاف نتائج اخذ کر لئے گئے، ان خیالات کااظہار جمیل عباسی قتل کیس کی کمیٹی ممبران نے میڈیا میں شائع ہونے والی خبروں پر تنقید کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو روز قبل کمیٹی کا اجلاس کمانڈنٹ ایلیٹ فورس اعجاز گوگا کی سربراہی میں منعقد ہوا جس میں تحصیل نائب ناظم سردار شجاع احمد، ناہید گل عباسی ، معروف صحافی و جائنٹ سیکرٹری پی ایف یو جے راجہ ہارون، تحصیل ممبران سردار شیر دل ، تاجر رہنما شبیر احمد قریشی، سلیم عباسی، شکیل عباسی اور ظہور عباسی نے شرکت کی، اجلاس میں پولیس نے موقف پیش کیا کہ پولیس تفتیش کے مطابق مفرور ساجد عرف خان ہی قتل کا ذمہ دار ہے ۔

جس پر کمیٹی ممبران نے اس موقف کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کا روز اول سے ہی یہی موقف ہے ، مقتول جمیل عباسی کی کسی سے رقابت داری نہیں تھی اور واقعہ میں ملوث اصل قاتل کی گرفتاری شواہد کے مطابق سامنے آنے پر ہی دعویداری کی جائے گی، انہوں نے میڈیا میں قاتل کی گرفتاری کے حوالے سے شائع خبروں پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اجلاس میں کسی بھی قسم کی کسی دعویداری کا فیصلہ نہیں کیا گیا اور پولیس نے کمیٹی ممبران کو اندھیرے میں رکھتے ہوئے حقائق کی پردہ پوشی کی کوشش کی جو کسی صورت قابل قبول نہیں، انہوں نے واضح کیا کہ پولیس قتل کے محرکات ، شواہد اور حقائق منظر عام پر لائے وگرنہ قاتلوں کی پشت پناہی سے گریز کیاجائے،انہوں نے دعویٰ کیا کہ کیس کی خانہ پری کسی صورت قابل قبول نہیں اور اصل ملزمان کی گرفتاری تک گلیات کے عوام ہر فورم تک جدوجہد سے گریز نہیں کریں گے۔


Comments

comments