والدین کیلئے خوشخبری۔ نجی اسکولوں کونکیل ڈال دی گئی۔


ایبٹ آباد:پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی خیبرپختونخواہ نے انڈرسیکشن 30 کے تحت نئے قوانین کا اعلان کرتے ہوئے تمام نجی تعلیمی اداروں بشمول مانٹیسوری، کنڈرگارڈن، ٹیوشن اکیڈمیوں و مراکز، پرائمری، مڈل، ہائی، ہائرسکینڈر ی اسکولوں پر ان قوانین کا فوری طور پر اطلاق ہوگا۔ اور تمام تعلیمی اداروں بشمول سرکاری و پرائیویٹ کو ان قوانین پر فوری طور اورسختی سے پشاورہائیکورٹ کے احکامات کے تحت ان قوانین پر عملدرآمد کا کہاگیاہے۔ یہ قوانین پشاور ہائیکورٹ کی جانب سے آٹھ نومبر2017ء کو پٹیشن نمبر 2093-P/2016کے فیصلے کے پیرا پندرہ کی روح کی روشنی میں وضع کئے گئے ہیں۔ تمام تعلیمی اداروں کیلئے فیس کا تعین بہت جلد پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی خیبرپختونخواہ کرے گی۔ اس وقت تک تمام تعلیمی اداروں کی فیسوں اورٹیوشن فیسوں میں کسی بھی قسم کا اضافہ نہیں کیا جاسکتا۔ تمام تعلیمی اداروں کو یہ بھی حکم جاری کیاگیاہے کہ ایک ہی اسکول میں زیر تعلیم دوسرے اور تیسرے بہن بھائیوں کی ٹیوشن فیس میں پچاس فیصد فوری طور پر کمی کی جائے۔

حکم نامہ کے مطابق ایک ماہ کی چھٹیوں کی صورت میں ٹیوشن فیس کی وصولی غیرقانونی ، خودساختہ اور غیرفطرتی ہے۔ تمام تعلیمی اداروں کے مالکان چھٹیوں کی غیرقانونی ٹیوشن فیس وصول کرنے کے مجاز نہیں ہیں۔ جہاں تک اسکول کے عملے کی تنخواہوں، یوٹیلٹی بلز اور کرایہ وغیرہ کی ادائیگی کیلئے زیادہ سے زیادہ پچاس فیصد ٹیوشن فیس کی وصولی کی جاسکتی ہے۔ پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی خیبرپختونخواہ اور پشاور ہائیکورٹ کے پاس طلباء کے والدین سے مختلف مدوں میں بھاری رقوم کی وصولی کے ثبوت بھی ملے ہیں۔ جو کہ فی طالبعلم کے حساب سے مختلف رقوم وصول کررہے ہیں۔ اس قسم کی رقوم و جرمانوں کی وصولی پر بھی ہر طرح کی پابندی عائد کردی گئی ہے۔

طلباء وطالبات سے اسکول کی چھٹیوں کے دوران ٹرانسپورٹ چارجز کی وصولی پر بھی مکمل پابندی عائد کردی گئی ہے۔ جبکہ پشاور ہائیکورٹ کی جانب سے ٹریفک پولیس کو یہ بھی حکم جاری کیاگیاہے کہ کسی بھی پرائیویٹ اسکول کا طالبعلم گاڑی سے لٹک کر سفرنہیں کرسکتا۔ اگر کسی پرائیویٹ اسکول کا طالبعلم مسافرگاڑی پر لٹک کر سفر کرتا ہوا پکڑا جائے تو اس بچے کے اسکول ٹیچر، اسکول کے پرنسپل اور اسکول کے مالک کیخلاف کارروائی کی جائے۔ اوران کیخلاف مقامی تھانہ میں ایف آئی آر درج کروائی جائے۔ اس کے علاوہ پشاور ہائیکورٹ اور پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی خیبرپختونخواہ کے احکامات پر عملدرآمدنہ کرنے والے تعلیمی اداروں کے مالکان، پرنسپلز کیخلاف مقامی تھانوں میں ایف آئی آر درج کروائی جائیں۔اس کے علاوہ تمام اسکولوں کی کینٹین کو خیبرپختونخواہ سیف فوڈ اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی ہفتہ واربنیادوں پرچیک کرے گی۔


Comments

comments