ضمنی بلدیاتی انتخابات کیخلاف حکم امتناعی خارج۔ مخصوص نشستوں پر برقرار۔


ایبٹ آباد:ضمنی بلدیاتی انتخابات کیخلاف حکم امتناعی پشاورہائیکورٹ نے خارج کردیا۔اس ضمن میں ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ سابق ممبر ضلع کونسل نذیر عباسی اور امیدوار ضلع کونسل ذوالفقار عباسی نے سردار تیموراسلم ایڈوکیٹ کی وساطت سے پشاور ہائیکورٹ میں پٹیشن دائر کرتے ہوئے مؤقف اختیار کیاتھاکہ یونین کونسل نملی میرا میں برفباری کی وجہ سے ضمنی بلدیاتی انتخابات ملتوی کئے گئے ہیں۔ تاہم بکوٹ میں موسم کی صورتحال نملی میرا سے بھی زیادہ خراب ہے۔ لہٰذا ستدعا ہے کہ بکوٹ سمیت دیگر یونین کونسلوں میں ہونیوالے ضمنی انتخابات عارضی طور پر ملتوی کئے جائیں۔ پشاور ہائیکورٹ کے ڈبل بینچ نے انیس فروری کو ہونیوالے ضمنی انتخابات کیخلاف حکم امتناعی جاری کیاتھا۔ جبکہ دوسری جانب عدالت نے یوسی نملی میرااور نذیر عباسی کی پٹیشن کوایک یکجا کردیاتھا۔ منگل کے روز کیس کی سماعت کے بعد عدالت نے ضمنی انتخابات کے خلاف حکم امتناعی خارج کردیا۔ جس کے بعد انیس فروری کو الیکشن ہونگے۔ یا پھر الیکشن کمیشن انتخابات کیلئے نیاشیڈول جاری کرسکتاہے۔

مخصوص نشستوں پر حکم امتناعی میں ستائیس فروری تک توسیع۔

ایبٹ آباد:مخصوص نشستوں پر حکم امتناعی میں ستائیس فروری تک توسیع۔ اس ضمن میں مقامی ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ سات جنوری 2018ء کو تحصیل ناظم حویلیاں سردار ارسل پرویزاورپاکستان مسلم لیگ(ن) کے ممبر ضلع کونسل ندیم مغل نے شوراب احمد بھٹی ایڈوکیٹ کی وساطت سے پشاور ہائیکورٹ میں رٹ پٹیشن دائر کرتے ہوئے مؤقف اختیار کیاکہ الیکشن کمیشن کی جانب سے ضمنی الیکشن کے شیڈول سے قبل ہی ایبٹ آباد اور تحصیل حویلیاں کی مخصوص نشستوں پر من پسند لوگوں کی تعیناتیاں کی گئی ہیں۔ اس لئے مخصوص نشستوں کے چناؤ کو کالعدم قرار دیتے ہوئے ان کیخلاف حکم امتناعی جاری کیاجائے۔ چھ فروری کواس کیس کی سماعت پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس وقار سیٹھ نے کی۔ عدالت کی جانب سے مخصوص نشستوں کے حکم امتناعی میں ستائیس فروری تک توسیع کردی گئی ۔


Comments

comments