لودھی کا پتہ پیلاہونے لگا۔ ارشداعوان کی درخواست پر حکم امتناعی جاری۔


ایبٹ آباد:پشاور ہائی کورٹ نے PK-38ایبٹ آباد اور PK-32مانسہرہ کا حتمی نوٹیفکیشن جاری کرنے کے خلاف حکم امتناعی جاری کر دیا ہے اور سات اگست کی تاریخ سماعت کیلئے مقرر کر دی گئی ہے اور دونوں فریقین کو اس سلسلے میں نوٹسسز جاری کر دیئے گئے ہیں جبکہ ایبٹ آباد پی کے36کی رٹ پٹیشن کو مختصر سماعت کے بعد خارج کر دیا گیا ہے پشاور ہائیکورٹ کے ڈبل بینچ نے پی کے38ایبٹ آباد ملک ارشد اعوان کی دوبارہ گنتی کی رٹ پٹیشن اور اسی حلقے سے کامیاب امیدوار الحاج قلندر لودھی کی کامیابی کے حتمی نوٹیفکیشن کے خلاف سماعت کے بعد حکم امتناعی جاری کر دیا گیا ہے اور مزید سماعت کیلئے سات اگست کی تاریخ مقرر کر دی گئی ہے اسی طرح مانسہرہPK-32میں حاجی ابرار کی رٹ پٹیشن پر بھی حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے سات اگست کی تاریخ مقرر کر دی ہے اور اس سلسلے میں فریقین کو نوٹسز جاری کر دیئے ہیں اور گنتی کے عمل کو جاری رکھنے کا حکم دیا ہے جبکہ ایبٹ آباد پی کے36کے پی ٹی آئی کے کامیاب امیدوار نذیر عباسی کے نوٹیفکیشن کو روکنے اور دوبارہ گنتی کے خلاف مسلم لیگ ن کے سردار فرید کی پٹیشن کو سرسری سماعت کے بعد خارج کر دیا گیا ہے حاجی ابرار اور ملک ارشد اعوان کی طرف سے سپریم کورت کے سینئر وکلاء سردار آمان ایڈوکیٹ اور سردار ناصر اسلم ایڈووکیٹ نے مقدمے کی پیروی کی جبکہ نذیر عباسی کی جانب سے سردار حسیب عباسی ایڈووکیٹ نے مقدمے کی پیروی کی یاد رہے کہ گزشتہ روز ایبٹ آباد ہائی کورٹ بینچ نے تینوں فریقین کی پٹیشن پر سماعت کے بعد مذکورہ مقدمات کو پشاور ہائیکورٹ ڈبل بینچ میں منتقل کر دیا گیا جس پر گزشتہ روز بروز جمعرات بحث ہوئی جس پر حکم امتناعی جاری کیا گیا ہے


Comments

comments