د س سالہ بچے کو زیادتی کے بعدقتل کرکے پھینک دیاگیا۔ مسخ شدہ لاش برآمد۔


ہری پور (یاور حیات) پنیاں افغان مہاجرین کیمپ کے قریب سے دس سالہ نامعلوم بچے کی دس دن پرانی مسخ شدہ لاش برآمدبچے کو ذیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے ز رائع پولیس نے لاش کو قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم اور شناخت کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا شناخت تاحال ممکن نہیں ہو سکی ورثاء کی تلاش جاری پولیس نے مقدمہ درج کرکے مزیدتحقیقات دریافت شروع کر دی ہے ایک ہفتہ قبل بھی خان پور کے علاقہ مارچ آباد سے سات سالہ کم سن راجہ عمر کی زیادتی کے بعد گلہ میں پھندا لگی تشددزدہ لاش کچہرے کے ڈھیر سے برآمد ہوئی تھی جس کے ملزم کو پولیس نے اگلے ہی دن گرفتا رکرلیا تھا ۔

زرائع کے مطابق گزشتہ روز چوکی پولیس پنیاں افغان مہاجر کو اطلاع ملی کہ چوکی پنیاں افغان مہاجرین کیمپ کے علاقہ پنیاں میرا کے قریب کھیتوں میں ایک بچے کی لاش پڑی ہے پنیاں چوکی پولیس نے اطلاع پا کر موقع پر پہنچ کر لاش کو اپنی تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے اور شناخت کے لیے آر ایچ سی کوٹ نجیب اللہ ہسپتال منتقل کر کیا پولیس کے مطابق بچے کی لاش افغان مہاجرین چوکی پنیاں کے قریب ویران کھیتوں سے ملی ہے جس کی عمر دس سال کے قریب ہے اورلاش بھی دس روز پرانی ہے جس کی شناخت کا عمل بھی جاری ہے جبکہ زرائع نے بتایا ہے کہ پولیس کو ابتدائی شواہد اور تفتیش کے دوران معلوم ہو اہے کہ بچے کو مبینہ ز یادتی اور تشدد کے بعد قتل کیا گیا اور لاش کو ویرانے میں پھینک دیا گیا ہے ۔

زرائع نے مزید بتایا ہے کہ لاش افغان مہاجر بچے کی لاش ہے جوکہ حلیہ سے بھی افغانی لگتا ہے تاہم پولیس نے ابھی تصدیق سے معذرت ظاہر کی ہے اور بتایا ہے کہ پنیاں چوکی پولیس نے لاش کو ہسپتال پوسٹ مارٹم کے لیے منتقل کیا ہوا ہے تفتیشی ٹیم بھی موقع پر موجود ہے پوسٹ مارٹم اور میڈیکل رپورٹ آنے کے بعد ہی حتمی رپورٹ درج کی جائے گی اگر بچے سے بدفعلی زیادتی کے مکمل ٹھوس شواہد کے ساتھ رپورٹ میں انکشاف سامنے آیا تو قتل کے ساتھ زیادتی کی دفعات بھی مقدمہ میں اندراج کر دی جائیں گیں تاہم ابھی دس سالہ بچے کی لاش کی شناخت ممکن نہیں ہو سکی ہے ورثاء کی تلاش بھی جاری ہے ملحقہ آبادیوں کے پولیس اسٹیشن چوکی انچارجوں سے لاپتہ بچوں کی رپورٹ درج بارے معلومات حاصل کی جا رہی ہیں توقع ہے جلد نامعلوم بچے کی لاش کی شناخت کا عمل مکمل کر لیا جائے گا۔

واضح رہے کہ ایک ہفتہ قبل بھی خان پور کے علاقہ مارچ آباد سے سات سالہ بچے راجہ عمر کی زیادتی کے بعد گلہ میں پھندا لگی لاش کچہرے کے ڈھیر سے برآمد ہوئی تھی جس کے ملزم مقتول کا قریبی رشتہ دار تھا ملزم شعیب جوڈیشنل ریمانڈ پرسنٹرل جیل ہری پور میں قید ہے حویلیاں میں فریال ہری پو رمیں راجہ عمر اور اب پھر دس سالہ بچے کی زیادتی کے بعد لاش ملنا جہاں شہریوں کے لیے تشویش کا باعث ہے وہاں حکومتی زمہ داران اداروں کے لیے بھی لمحہ فکریہ ہے ایسے اقدام کی روک تھام کے لیے پولیس کے ساتھ مل کر دیگر صوبائی وفاقی محکموں کو آگاہی مہم کے ساتھ سکول کالجوں میں اس سے آگاہی کے لیے سیمینار کے انعقاد کو یقینی بنا نا ہو گا تاکہ ایسے واقعات کی روک تھام ممکن ہو سکے

gif

gif


Comments

comments