پولیس نے ناظم جمیل عباسی کے قاتل کا تعین کرلیا۔


ایبٹ آباد:ناظم جمیل عباسی قتل کیس کا ڈراپ تفتیش مکمل تھانہ بگنوتر پولیس نے مفرور ساجد عرف خان کو ملزم قرار دے دیا ۔ناظم قتل مقدمہ میں مفرور ساجد خان کی گرفتاری تک کوئی پوچھ گچھ نہیں ہوگی مفرور کی گرفتاری ناگزیر قرار دے دی گئی اس سلسلہ میں کمانڈنٹ ایلیٹ فورس ہزارہ ریجن ملک اعجاز گوگا کے دفتر میں ڈی ایس پی گلیات محمد جاوید ایس ایچ او نواں شہر کیڈٹ حفیظ ایس ایچ او بگنوتر قمر خان انچارج شعبہ تفتیش بگنوتر محمد فاروق پالا نے کمانڈنٹ اور تحصیل نائب ناظم سردار شجاع احمد کی سربراہی میں ایکشن کمیٹی ممبران اور مقتول کے لواحقین کو ہونے والی تفتیش پر تفصیلی بریفنگ دی اور واضح کیا کہ اب ناظم قتل مقدمہ میں تفتیش مکمل کر لی ہے اور دوران تفتیش ناظم جمیل کے قتل میں مفرور ساجد عرف خان کے ملوث ہونے کے شواہد ملے ہیں اب مفرور کی گرفتاری کے بعد ہی تفتیش کا عمل شروع کریں گے اور مفرور کی گرفتاری ٹارگٹ ہے جس کے لئے پولیس نے کوششیں شروع کر رکھی ہیں عمائدین علاقہ تعاون کریں ۔

اس موقع پر کمیٹی ممبران کی جانب سے سوالات جوابات کیئے گئے اورکہا گیا کہ اگر مفرور کو جلد گرفتار نہ کیا گیا تو چوتھا قتل بھی ہو سکتا ہے جو پولیس کی نااہلی ہو گیا قبل ازیں بھی پولیس کی روایتی سستی کی وجہ سے قتل ہوئے ہیں میٹنگ میں مقتول کے دو حقیقی بھائی اور قریبی رشتہ دار ظہور عباسی کمیٹی ممبران سردار شیردل ، شبیر قریشی ، راجہ محمد ہارون ،ناہید گل عباسی ، شجاع احمد شریک ہوئے اور کہا کہ مفرور کی گرفتاری کو یقینی بنایا جائے۔


Comments

comments