الیکشن میں ساتھ نہ دینے پر نواں شہر کے بلدیاتی نمائندوں کیخلاف مقدمہ درج۔


ایبٹ آباد: یونین کونسل نواں شہر بھی تبدیلی کی زد میں آگئی۔نواں شہر کی دونوں ویلیج کونسلزکے دفاتر کو زبردستی تالے لگا دیے گئے ۔ ڈپٹی کمشنر کے احکامات بھی مسترد پی ٹی آئی کے مقامی ایم پی اے اور پی ٹی آئی کے نمائندوں نے الیکشن میں ساتھ نہ چلنے والوں کے خلاف انتقامی کاروائیاں شروع کر دی ہیں اور اس ضمن میں نواں شہر کے ناظم وجاہت خان اور نائب ناظم عباس علی اور جنرل کونسلر زرگل خان کے خلاف انتقامی کاروائی کرتے ہوئے چیف آفیسر کی مدعیت میں تھانہ نواں شہر میں جھوٹی ایف آئی آر کٹوا کر ان کے دفاتر کو سیل کر دیا گیا ہے ۔

اس معاملے پر نوٹس لیتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے تحصیل حکومت کو احکامات جاری کرتے ہوئے تحصیل حکومت کو نواں شہر کے ناظمین کے دفاتر کو فورا کھولنے کا حکم دیا مگر تبدیلی حکومت نے ڈپٹی کمشنر کے احکامات کو بھی نظر انداز کر دیا جس کی وجہ سے مقامی لوگوں میں شدید غم وغصہ پایا جاتا ہے اس ضمن میں لوگوں کا کہنا تھا کہ نواں شہر ٹاؤن کمیٹی پر ہم کسی کو بھی قبضہ کرنے نہیں دیں گے یہ ٹاؤن کمیٹی نواں شہر کے لوگوں کی ملکیت ہے کسی ایم پی اے یا ناظم کی طرف سے اگر اس پر قبضہ کرنے کی کوشش کی گی تو ہم بھرپور احتجاج کریں گے اور ہم پی ٹی آئی کی طرف سے دی گئی ایسی تبدیلی کو سوشل میڈیا اور پرنٹ میڈیا پر ننگا کر دیں گے ۔ایسی تمام انتقامی کاروائیوں سے علاقے کا امن تباہ ہونے کا خدشہ ہو گا اور ہم انتظامیہ سے بھرپور طریقے سے کہتے ہیں کہ وہ ناظم نواں شہر وجاہت خان،نائب ناظم عباس علی اور کونسلر زرگل خان کے خلاف کروائی گئی ایف آئی آر کو فوراً خارج کرے ۔

یاد رہے کہ وجاہت خان اور عباس علی نے نواں شہر کے مسائل کے حل کے لیے دن رات محنت کی ہے اور دونوں کی وجہ سے کروڑوں روپے کے ترقیاتی کام نواں شہر میں ہوئے ہیں اور آج نواں شہر کی عوام ان دونوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔


Comments

comments