قاضی محمد اسد کو بھی ٹیکالگ گیا۔ مسلم لیگ(ن) کا ٹکٹ مشکوک۔


ہری پور(تحقیقاتی رپورٹ)مسلم لیگ ن کے امیدوار قاضی محمد اسد خان کا مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر الیکشن مشکوک مسلم لیگ ن کے مقامی راہنما نے اپنے بھتیجے کیلئے الیکشن مہم کا آغاز کر دیا ووٹر،سپورٹروں دھڑے جنبے نے قاضی محمد اسد خان کو آزادحیثیت سے الیکشن لڑنے کا مطالبہ کر دیا انشاء اللہ آزاد حیثیت میں قاضی محمد اسد خان بھاری حیثیت سے کامیابی حاصل کریں گے حلقہ کے عوام ذرائع نے بتایا ہے کہ سابق صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن و راہنما مسلم لیگ ن قاضی محمد اسد خان سے مقامی لیگی راہنما نے ہاتھ کر دیا اور انکی جگہ اپنے بھتیجے کو پی کے 42سے میدان میں اتارنے اور پارٹی ٹکٹ دینے کا ارادہ کرتے ہوئے الیکشن مہم شروع کر دی ہے جس سے قاضی محمد اسد خان کا ن لیگ کا ٹکٹ مشکوک ہو گیا ہے۔

اس صورتحال کے بعد قاضی محمد اسد کے ووٹروں سپورٹروں دھڑے جنبے نے قاضی محمد اسد خان سے فی الفور آزاد حیثیت سے الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان کرنے کا مطالبہ کر دیا حلقہ پی کے 42کے عوام نے کہا کہ انشاء اللہ مسلم لیگ ن کو بے وفائی کی سزا ملے گی اور ن لیگ کے امیدوار کے مقابلے میں قاضی محمد اسد بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کریں گے حلقہ کے عوام نے قاضی محمد اسد سے مطالبہ کیا کہ فی الفور آزاد حیثیت سے الیکشن لڑنے کا اعلان کریں کامیابی ہمارا مقدر ہو گی یا د رہے کہ مسلم لیگ ن کی مقامی قیادت کو تینوں حلقوں میں اس مرتبہ نئے امیدوار میدان میں اتار نے کا شوق چڑھا ہوا ہے جو پارٹی کیلئے نقصان دہ ثابت ہو گا راجہ فیصل زمان کے بارے میں بھی افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ انہیں بھی ٹکٹ نہیں دیا جائے گا بلکہ انکی جگہ سردار محمد مشتاق کو میدان میں اتارا جا سکتا ہے جبکہ PK۔40میں بھی میدان کھلا چھوڑنے کا امکان ہے


Comments

comments