دہمتوڑ کے رہائشی کے ہاں سات سال بعد چارجڑواں بچوں کی پیدائش۔


ایبٹ آباد:دہمتوڑ کے رہائشی نے چوکا مارلیا۔ سات سال بعد بیک وقت چار بچوں کی پیدائش۔دس ماہ میں بارہ ہزاربچوں کی پیدائش۔اس ضمن میں ایوب ٹیچنگ ہسپتال کے ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ ایک مشہور کہاوت ہے کہ اللہ کے ہاں دیر ہے۔ اندھیر نہیں۔ دہمتوڑ کے رہائشی 29سالہ محمد محبوب کی شادی سات سال قبل ہوئی۔ لیکن وہ سات سال تک اولاد نرینہ کی نعمت سے محروم رہے۔ اللہ تعالیٰ سے دعائیں کرتے رہے۔ اور شادی کے سات سال کے بعدمحمد محبوب کی اہلیہ کو دردزچگی کے دوران ایوب ٹیچنگ ہسپتال کے گائنی ڈیپارٹمنٹ کے یونٹ بی میں 4جڑواں بچوں کی پیدائش ہوئی ۔جن میں دو بیٹے اور دو بیٹیاں شامل ہیں ان کے گھر والوں نے وارڈ میں مٹھائی تقسیم کی اور سب نے بچوں کی صحت کے لئے خصوصی دعا کی۔

ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر روبینہ بشیر اور ڈاکٹر رقیہ سلطانہ نے اپنی ٹیم کے ہمراہ یہ کامیاب آپریشن کیا ۔ ماں اور بچوں کی صحت بالکل ٹھیک ہے اور انہیں وارڈ میں شفٹ کر کے بہترین طبی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔

ایوب ٹیچنگ ہسپتال میں اس سال کے وسط میں عورتوں اور بچوں کے لئے 450بستروں پر مشتمل مدر اینڈ چائلڈ ہیلتھ سنٹر شروع کیا گیا تھا جس میں عورتوں اور بچوں کی بہترین طبی سہولیات بالکل مفت مہیا کی جاتی ہیں جس کی بناء پر ہسپتال میں مریضوں کا رش بھی بڑھ گیا ۔
ایوب ٹیچنگ ہسپتال میں روزانہ کی بنیاد پرتقریبا 50بچوں کی پیدائش ہوتی ہے اور گائنی ڈیپارٹمنٹ کی ڈاکٹرز اور سٹاف نرسیں نہایت خوش اسلوبی سے ہزاروں مریضوں کو ایمرجنسی ، او پی ڈی ، وارڈز اور آپریشن تھیٹرز میں صحت کی سہولیات فراہم کر رہی ہوتی ہیں ۔ایوب ٹیچنگ ہسپتال میں اس سال گزشتہ 10ماہ میں تقریبا 12000بچوں کی پیدائش ہوئی جس میں سے 4ہزار بچوں کی پیدائش گائنی ڈیپارنمنٹ کے بی یونٹ میں ہوئی ۔

اس موقع پر گائنی ڈیپارٹمنٹ کی چیئر پرسن نے اپنے سٹاف کی کارکردگی کو تسلی بخش قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے تمام سٹاف ڈاکٹرز ، ٹرینی ڈاکٹرز اور نرسز کی کارکردگی سے بے حد مطمئن ہیں اس وقت ہمارے شعبہ پر مریضوں کا سب سے زیادہ بوجھ ہے، مانسہرہ اور ہریپور سے روزانہ درجنوں کے حساب سے ریفرل کیسز ایمرجنسی میں آتے ہیں لیکن وسائل کی کمی کے باوجود ہمارا سٹاف نہایت خوش اسلوبی سے انہیں طبی سہولیات فراہم کر رہا ہے اور آج تک کسی مریض کو بغیر علاج کے واپس نہیں بھیجا گیا ۔ گائنی ڈیپارٹمنٹ میں میں 3یونٹ اے ، بی اور سی پہلے سے کام رہے ہیں اور عوام کا بہترین طبی سہولیات کی فراہمی کے لئے ایک نیا یونٹ گائنی ڈی بھی شروع کیا گیا ہے ۔


Comments

comments