نوسرباز کنٹریکٹر شوکت علی نے ہمارے کروڑوں روپے دینے ہیں: متاثرین۔


ایبٹ آباد:نوسرباز کنٹریکٹر شوکت علی کروڑوں روپے کا نادہندہ نکلا۔ متاثرین نے پریس کانفرنس کے دوران تمام حقائق بتادیئے۔ اس ضمن میں ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران زبیدہ خلجی، بہادرخان، حافظ افتخار ، عبداللہ شاہ، علی خان جدون، راجہ اصغر علی اور دیگر نے بتایاکہ شانگلہ سے تعلق رکھنے والا کنٹریکٹراورشوکت اینڈ کوکا مالک شوکت علی ولدسلطنت خان کاکول روڈ ایبٹ آباد میں رہائش پذیر ہے۔ اس شخص نے ہم لوگوں نے سے کروڑوں روپے تعمیراتی کاموں کے ٹھیکوں کیلئے لئے اور ہڑپ کرلئے ہیں۔اس شخص کیساتھ کئے جانیوالے تمام معاہدے ہمارے پاس موجود ہیں۔ اس دھوکے باز شخص نے ہمیں کہاکہ اس کے پاس مختلف ٹھیکے ہیں۔ اور ان ٹھیکوں کی تکمیل کیلئے رقم کی ضرورت ہے۔

شوکت علی نے باقاعدہ معاہدے کے تحت زبیدہ خلجی سے اڑھائی کروڑ روپے، بہادر خان سے بارہ کروڑ پچاس لاکھ روپے، حافظ افتخار سے پندرہ کروڑ پچاس لاکھ روپے، عبداللہ شاہ سے پانچ کروڑ 33 لاکھ روپے، علی خان جدون سے تیس لاکھ روپے، راجہ اصغر علی سے ایک کروڑ تیس لاکھ روپے اور دیگر سے بھی کروڑوں روپے لئے۔ ٹھیکوں کی تکمیل کے بعد یہ شخص غائب ہوگیا ۔ نہ ہمیں یہ ملتاہے اور نہ ہی ہماری رقم واپس کررہاہے۔ اس مسئلے پر کئی جرگے بھی ہوئے۔ لیکن یہ شخص دھوکہ دہی سے کام لیتارہا۔ اس شخص کیخلاف ہم نے پولیس کی مدد سے ایف آئی آر درج کرائیں۔ لیکن یہ ضمانتوں پر رہا ہوگیا۔ اور پھر اس شخص کے کارندوں نے سوشل میڈیا پر پولیس اور عدلیہ کیخلاف منفی پروپیگنڈا مہم شروع کررکھی ہے۔ جبکہ اس شخص نے پریس کانفرنس کے دوران ہم لوگوں کو نوسرباز کہا۔ جبکہ حقیقت یہ ہے ایک شخص نوسرباز ہوسکتاہے۔ آپ دیکھ سکتے ہیں کہ ہم سب لوگوں کو اس شخص نے دھوکے سے لوٹا ہے۔ بہت سے سیاسی رہنماء اس شخص کی پشت پناہی کررہے ہیں۔ اگر ہم لوگوں کو انصاف نہ ملا تو ہم لوگ سپریم کورٹ کے باہر احتجاجی دھرنادینگے۔ یہ شخص ہم لوگوں کو قتل کرنے کی دھمکیاں دے رہاہے۔ ہمیں اس شخص سے تحفظ بھی فراہم کیاجائے۔

Contractor Shoukat Ali in Police Custody after FIR in Fraud Case in PS City Abbottabad.

Comments

comments