انٹرمیڈیٹ کے رول نمبر امتحان سے تین روز قبل جاری کرنے پر لوگوں میں شدید اشتعال۔ 


ایبٹ آباد:انٹرمیڈیٹ کے رول نمبر امتحان سے تین روز قبل جاری کرنے پر لوگوں میں شدید اشتعال۔ اس ضمن میں ایبٹ آباد سمیت ہزارہ بھر کے شہریوں نے صحافیوں کو بتایاکہ انٹرمیڈیٹ کے سالانہ امتحانات انیس یا بیس اپریل سے شروع ہورہے ہیں۔ جبکہ کسی بھی امیدوار کو ثانوی تعلیمی بورڈ کی جانب سے تاحال رول نمبر جاری نہیں کئے گئے ہیں۔ جب طلباء و طالبات اور مختلف تعلیمی اداروں کی انتظامیہ نے بورڈ سے رابطہ کیا تو بورڈ والو ں کا کہناتھاکہ رول نمبر سولہ سے انیس اپریل کے درمیان جاری کئے جائیں گے۔ بورڈ کے اہلکاروں کی جانب سے طلباء کے مستقبل سے کھیلنے کی اجازت کسی صورت نہیں دی جاسکتی۔

نواں شہر کے نوجوان رہنماء بابر خان کا کہناہے کہ اگر انٹرمیڈیٹ کے طلباء و طالبات کو فوری طور پر رول نمبر جاری نہ کئے گئے تو پھرحالات کی تمام تر ذمہ داری بورڈ انتظامیہ پر عائد ہوگی۔ ہڑتال کرنا بورڈ ملازمین کا حق ہے۔ لیکن ہزاروں طلباء و طالبات کے مستقبل سے کسی کو کھیلنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ بورڈ کے ملازمین ہوش کے ناخن لیں اور طلباء و طالبات کو فوری طور پر رول نمبر جاری کریں۔

بورڈ ملازمین نے انٹرمیڈیٹ کے امتحانات کے بائیکاٹ کا عندیہ دے دیا۔

ایبٹ آباد:خیبر پختونخواہ کے آل تعلیمی بورڈ کوارڈنیشن کونسل نے مطالبات کی منظوری کیلئے ڈیڈ لائن دے دی ہے اور حکومت کو خبر دار کیا ہے کہ اگر ہمارے مطالبات پورے نہ کئے گئے تو پورے صوبے کے آٹھ تعلیمی بورڈز کے زیر انتظام ہونے والے انٹر میڈیٹ کے امتحانات کا بائیکاٹ کریں گے اور اس سلسلے میں آج بروز جمعرات صوبے کے تمام بورڈز میں ایک روزہ قلم چھوڑ ہڑتال ہو گی اور اس دوران میٹرک اور انٹر کے امتحانات کے سلسلے میں ہونے والے کام کا مکمل بائیکاٹ کیا جائے گا اور مطالبات کی منظوری کیلئے احتجاجی ریلیاں، مظاہرے اور جلوس نکالے جائیں گے اس سلسلے میں آل کے پی کے بورڈ کوارڈنیشن کونسل کے چیئر مین کامران اقبال نے کہا ہے کہ کے پی کے بورڈز کی خود مختاری کے خاتمے کے خلاف ڈٹ کر کھڑے ہوں گے اور کسی بھی صورت میں بورڈ کی خود مختاری، فنڈز کی بندر بانٹ اور ملازمین کش پالیسیوں کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے اگر کے پی کے حکومت نے ہمارے مطالبات کو منظور نہ کیا تو ہم آنے والے انٹر میڈیٹ کے امتحانات کا مکمل بائیکاٹ کریں گے اور ان امتحانات کے کام میں حصہ نہیں لیں گے انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں آج بروز جمعرات صوبے کے تمام بورڈز میں ایک روزہ قلم چھوڑ ہڑتال کی جا رہی ہے اور اس موقع پر احتجاجی مظاہرے، جلسے، جلوس نکالے جائیں گے اور مطالبات کی منظوری کیلئے حکومت پر دباؤ ڈالا جائے گا انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے ان جائز مطالبات کی نجی سکولز ایسوسی ایشن، ٹیچرز ایسوسی ایشن اور ایپکا سمیت دیگر ٹریڈز یونین بھی مکمل حمایت کر رہے ہیں اور ہمارے ساتھ ہیں


Comments

comments