قلندرلودھی کی راجدہانی میں تین افراد کچی سڑک کی وجہ سے جاں بحق پانچ زخمی۔


ایبٹ آباد: ترنوائی میں سال کا پہلا بدترین حادثہ۔ خاتون سمیت ایک ہی خاندان کے تین افراد لقمہ اجل بن گئے۔ پانچ شدید زخمی۔ صوبائی وزیرخوراک قلندرخان لودھی کیخلاف اہلیان علاقہ سراپا احتجاج۔ اس ضمن میں مقامی ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ منگل کے روز گاؤں ریالہ میں ایک فوتگی میں شرکت کیلئے مقامی لوگ سوزوکی گاڑی میں جارہے تھے کہ ترنوائی کے قریب کچی سڑک پر ایک خطرناک موڑ کاٹتے ہوئے مسافر سوزوکی گاڑی سینکڑوں فٹ گہری کھائی میں جاگری ۔ جس کے نتیجے میں گاڑی میں سوار نسرین بی بی زوجہ شفیق، پی ایم اے کاملازم وزیر محمد ولد محمد دین اور اس کا بھتیجا ڈرائیور واجد ولد گل محمد ساکنان ڈنہ موقع پر جاں بحق ہوگئے۔ جبکہ گاڑی میں سوار سبینا بی بی زوجہ اسلم سکنہ کاکول، یاسمین، سوسن، عبدالعزیز اور روبینہ نامی خاتون شدید زخمی ہوگئیں۔

جن کو مقامی لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت ایوب ٹیچنگ ہسپتال پہنچایا۔ تمام زخمی ایوب ٹیچنگ ہسپتال میں زیر علاج ہیں۔ جن میں سے متعدد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ بدترین حادثے پر مقامی لوگوں نے پاکستان تحریک انصاف کے ایم این اے ڈاکٹر اظہر جدون اورصوبائی وزیر خوراک قلندرخان لودھی کیخلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے کہاہے کہ ان دوعوامی نمائندوں کی وجہ سے علاقے کے لوگ آج بھی پتھر کے دور کی زندگی گزا ر رہے ہیں۔ ترنوائی روڈ پر ہفتے میں دو تین حادثے ہوتے رہتے ہیں۔ لیکن آج تک کسی بھی منتخب نمائندے نے اس سڑک کی تعمیر کیلئے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔

ABBOTTABAD: Jan09 – Local men shifting the bodies of Passengers on Jeeps. Three Passengers Killed and Six sustain serious Injuries during accident in Tarnawai area. ONLINE PHOTO by Sultan Dogar

Comments

comments