فوڈاتھارٹی کی کارروائیاں۔ تاجروں نے کمیٹی تشکیل دے دی۔ 


ایبٹ آباد: فوڈاتھارٹی کی کارروائیاں۔ تاجروں نے کمیٹی تشکیل دے دی۔ کشمیر کلاتھ کے ملازم شبیرقریشی کیخلاف شدید احتجاج۔ اس ضمن میں ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ انجمن تاجران ٹانچی چوک کے صدر سردار شاہنواز نے فوڈاتھارٹی کی کارروائیوں پر اتوار کے روز تمام تاجریونینزکا اجلاس طلب کیا۔ جس میں اشیاء خودونوش کا کاروبار کرنیوالے تاجروں نے بہت بڑی تعداد میں شرکت کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سردار شاہنواز ،ملک سجاد،مفتی جعفر،بشیربٹ اوردیگرنے کہاکہ فوڈ اتھارٹی کی تاجروں کیخلاف کارروائیاں انتقامی کارروائی ہیں۔ فوڈ اتھارٹی والوں کو چاہئے تھاکہ وہ پہلے تاجروں کو اعتماد میں لیکر اپنی قانونی حیثیت اور طریقہ کار کے بارے میں ہمیں بتاتے۔ لیکن تاجروں کیساتھ کسی بھی قسم کی مشاورت کے بغیر فوڈ اتھارٹی کے اہلکاروں نے کارروائیاں شروع کردی ہیں۔ جس کی ہم بھرپور مذمت کرتے ہیں۔

تاجروں کاکہناتھاکہ کشمیر کلاتھ کا شبیر قریشی نامی ملازم انتظامیہ کی ٹاؤٹ گیری کرتے ہوئے تاجروں کا نمائندہ بناہواہے۔ جس کی ہم بھرپور مذمت کرتے ہیں۔ ایک کپڑے کی دوکان پر کام کرنیوالا کسی پکوڑاشاہ، جوس یا سبزی فروش کے مسائل سے کیسے آگاہ ہوسکتاہے؟ اس موقع پر اتفاق رائے سے فوڈ اتھارٹی سے مذاکرات کیلئے ایک کمیٹی بھی تشکیل دی گئی۔ جس میں دودھ فروش یونین کے لیاقت قریشی، ایوان تجارت کے مفتی جعفر، نانبائی ایسوسی ایشن کے بشیر بٹ اور سردار عقیل، ہوٹل ایسوسی ایشن کے محمد رمضان، عمربخاری، سبزی فروش یونین کے اقبال عباسی، کباب فروش یونین کے اکبر، جوس فروش یونین کے خان گل، پکوڑہ یونین کے حفیظ الرحمن، قصاب یونین کے صابر،خان گل، بیکری یونین کے راجہ حفیظ شامل ہیں۔


Comments

comments