نیشنل سٹیشنری میں بارہ لاکھ کی نقدی چوری کرنیوالے دوملازم گرفتار۔ 


ایبٹ آباد:نیشنل سٹیشنری میں بارہ لاکھ کی نقدی چوری کرنیوالے ملازمین نکلے۔ دو گرفتار۔ ڈیڑھ لاکھ کی نقدی برآمد۔اس ضمن میں ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ ایبٹ آباد شہر کے وسط میں واقع نیشنل سٹیشنری میں رواں سال جنوری میں تین لاکھ روپے کی نقدی چوری کرلی گئی۔ لیکن پولیس چور کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی۔ جبکہ رواں ہفتے پیر کے روز نیشنل سٹیشنری میں سے ایک مرتبہ پھر نولاکھ روپے کی نقدی چوری کرلی گئی۔ جس کی رپورٹ تھانہ سٹی ایبٹ آباد میں درج کی گئی۔

ذرائع کے مطابق پولیس نے ابتدائی تفتیش کے دوران نیشنل سٹیشنری میں کام کرنیوالے دو ملازمین ارسلان ولد عبدالقیوم سکنہ کھٹوال اورحارث ولداورنگزیب سکنہ گلی بنیاں کو گرفتار کرکے تفتیش کی تو انہوں نے چوری کی دونوں وارداتوں کا اعتراف کرتے ہوئے بتایاکہ چوری والی رات دونوں ملازمین دیگرملازمین سے چھپ کرسٹیشنری کے اندر ہی چھپ کررہ گئے تھے۔ رات کو انہوں نے رقم چوری کی اورساری رات سٹیشنری میں ہی گزاری۔ نیشنل سٹیشنری جو کہ کافی وسیع ہے۔ صبح جب دیگر ملازمین نے آکر سٹیشنری کو کھولا تو جونہی سٹیشنری میں خریداروں کاہجوم بنا تو وہ خاموشی کیساتھ انٹری کردی۔ اورکسی کو کانوں کان خبر تک نہ ہوئی۔ ذرائع کے مطابق چوری کی دونوں وارداتوں کے دوران دوکان میں لگے ہوئے سی سی ٹی وی کیمروں کو آف کردیاگیا۔ جس کی وجہ سے سٹیشنری میں رات کو ہونیوالی کارروائی ریکارڈ نہیں ہوئی۔ پولیس نے ابتدائی تفتیش کے دوران شک کی بناء پر ارسلان ولد عبدالقیوم سکنہ کھٹوال اورحارث ولداورنگزیب سکنہ گلی بنیاں حراست میں لیکر تفتیش کی تو انہوں نے اقبال جرم کرلیا ۔ پولیس کے مطابق ملزمان کی نشاندہی پر ڈیڑھ لاکھ کی نقدی برآمد کرلی گئی ہے۔ جبکہ دوسری جانب ملزمان کا سٹیشنری کے مالکان سے راضی نامہ کیلئے معاملات بھی چل رہے ہیں۔


Comments

comments