ایبٹ آباد کھڑیلہ میں خاتون پر اس کے جیٹھ نے تشدد کی حد کردی۔


ایبٹ آباد:گاؤں اکھڑیلہ میں مسماۃ شہناز بی بی کو اس کے جیٹھ نے بے پناہ تشدد کا نشانہ بنایا جس سے عورت کے پورے جسم پر زخموں کے نشانات ہیں اور کہ وقوعہ کو12دن گزر گئے ابھی تک ایف آئی آر نہیں کاٹی گئی اور ابھی تک ہسپتال کے عملہ نے میڈیکل رپورٹ تک نہیں بھیجی واقعہ انتہائی افسوسناک ہے ان خیالات کا اظہار چائلڈ رائیٹس کلب کے فوکل پرسن اور ممبر ہیومن رائیٹس محمد ادریس اعوان ایڈووکیٹ نے ایک پریس ریلیز میں کیا ہے انہوں نے مزید یہ کہا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو انتہائی ذمہ داری سے کام کرنا ہوگا اور خاص کر عورتوں اور بچوں سے متعلق مقدمات میں خصوصی دلچسپی لینا ہوگی تا کہ متاثرہ لوگوں کو بروقت انصاف مل سکے اور کہا کہ اس ضمن میں تمام اداروں کو تحریری نوٹس بھیج رہے ہیں تا کہ مطابق قانون ایکشن لیا جائے اور کہا کہ ہم عورتوں اور بچوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے ہر فورم پر آواز بلند کریں گے اور اپنے موقف سے کسی بھی صورت پیچھے نہیں ہٹیں گے، اس ضمن میں عوام بھی ہمارا ساتھ دے تا کہ ہم اپنے بچوں اور خواتین کو محفوظ بنا سکیں۔


Comments

comments