پپس اسکول سے نکالے جانیوالے شخص کاکمسن بیٹامحنت مزدوری کے دوران بری طرح جھلس گیا۔


ایبٹ آباد: شرارتی بچے کیوجہ سے باپ کیساتھ محنت مزدوری کرنیووالابچہ بری طرح جھلس گیا۔ پولیس چوکی سپلائی میں کارروائی کیلئے درخواست دیدی گئی۔اس ضمن میں مقامی ذرائع نے صحافیوں کو بتایاکہ جھنگی کا رہائشی بخت زیب نے ایم ایس سی کیاہواہے۔ اور این ٹی ایس ٹیسٹ بھی ٹاپ کیاہواہے۔ لیکن سفارش نہ ہونے کی وجہ سے اسے ملازمت نہ مل سکی۔ کچھ عرصہ قبل تک پاکستان انٹرنیشنل پبلک اسکول میں ملازمت کرتاتھا۔ اسکول کی انتظامیہ نے اسے ملازمت سے نکال دیا۔ جس کے بعد بخت زیب نے بیروزگاری سے تنگ آکرڈسکوچوک سپلائی میں شامی کباب بنانے کا کام شروع کردیا۔ بخت زیب کا آٹھ سالہ بیٹا ابوہریرہ اپنے والدکا ہاتھ بٹانے اس کیساتھ محنت مزدوری کرتاتھا۔

جمعہ کے روز ابوہریرہ چولہاجلا کر کباب بنانے میں مصروف تھاکہ ایک بچہ اس کو بار بار تنگ کررہاتھا۔ اسی اثناء میں شرارتی بچے نے ابوہریرہ پر ابلتا ہوا تیل گرادیا۔ جس سے ابوہریرہ بری طرح جھلس گیا۔ ابلتے ہوئے تیل کی وجہ سے ابوہریرہ کے جسم کا نوے فیصد حصہ بری طرح جھلس گیا اور اس کی چمڑی بھی اترگئی۔ جسے مقامی لوگوں نے بمشکل ایوب ٹیچنگ ہسپتال منتقل کردیا۔ جہاں وہ نام نہاد برن یونٹ میں زیر علاج ہے۔ جبکہ دوسری جانب زخمی بچے کے والد کی رپورٹ پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔


Comments

comments