ایک اور نایاب جنگلی چیتے (تیندوے) کو ہلاک کردیاگیا۔ پولیس اور وائلڈ لائف خاموش۔

ہری پور(رپورٹ:یاورحیات/وائس آف ہزارہ)جنگلی تیندوے کی ہلاکت کا معاملہ زمہ داروں کا تعین نہ ہوسکا تیندواے کی نمونے ٹیسٹ کے لیے لیبارٹری بھجوادیے۔گیہزارہ میں تیندواے کی ہلاکت کا دوسرا واقعہ سامنے آیا ہے ایک ماہ قبل مانسہرہ میں بھی شہریوں نے تیندواے کو ہلاک کیا تھاجس پر تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کیاگیا تھا زرائع کے مطابق گزشتہ روز اپر خان پور کے جنگلات میں تیندواے کی ہلاکت پرمحکمہ وائلڈ لائف ہری پور کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کے تیندواے کی ہلاکت کاڈیک آرسٹ سے ہوئی تاہم تیندواے کے سمپل لیبارٹری ٹیسٹ کے لیے بھیج دیے گئے ہیں محکمہ وائلڈ لائف کے ایس ڈی ایف او اویس خان نے بتایا کے مقامی ذرائع سے تیندواے کی ہلاکت کی خبر موصول ہوئی تھی جس کے بعد اسکی تلاش کے لیے ٹیم روانہ کی گی تیندوے کی لاش ملنے کے بعد تیندواے کاپوسٹ مارٹم کرایا گیا ہے جس سے تیندواے کو کسی شخص کی جانب سے ہلاک کرنے کی تصدیق تاحال نہیں ہوسکی ہے امکان ہے کہ تیندوے کی موت کاڈیک آرسٹ سے ہوئی ہے پھر بھی مزید تفتیش کے لیے سمپل لیبارٹری بھیج دیئے گئے ہیں اور تیندواے کو سٹف کرنے کے لیے پشاور بھیج دیا گیا ہے اس حوالہ سے مزید تحقیقات شروع کردی گیں ہیں واضح رہے کہ ہزارہ ڈویثرن میں ایک ماہ کیدوران تیندواے کی دو اموات کے واقعات سامنے آچکے ہیں اس سے قبل مانسہرہ کے علاقہ میں شہریوں نے جنگلی تیندواے کی جانب سے بچے پر حملہ کرنے کے الزام پر تیندواے کوہلاک کردیا گیا تھا جس پر متعلقہ محکمہ نے تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کررکھا ہے

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!