پاکستانی خواتین کو محرم کے بغیر حج پر جانے نے کی مشروط اجازت۔

اسلامی نظریاتی کونسل نے بغیر محرم حج پر جانے والی خواتین کیلئے والدین یا شوہر کی اجازت لازمی قرار دے دی۔
قابل اعتماد خواتین کی رفاقت حاصل ہونے پر کوئی بھی خاتون بغیر محرم عازم حج ہو سکتی ہے، ترجمان۔
اسلام آباد(وائس آف ہزارہ) پاکستانی خواتین کو محرم کے بغیر حج پر جانے کی مشروط اجازت مل گئی۔ اسلامی نظریاتی کونسل کی جانب سے خواتین کو محرم کے بغیر حج پر جانے کی مشروط اجازت دی گئی ہے، اس حوالے سے ترجمان اسلامی نظریاتی کونسل نے بتایا ہے کہ وزارت مذہبی امور نے خواتین کے محرم کے بغیر حج کے معاملے پر کونسل سے رائے طلب کی، جس کے جواب میں کونسل نے قرار دیا ہے کہ فقہ جعفریہ، مالکی اور شافعی کے مطابق شریعت میں بغیر محرم کے خاتون کے حج کی گنجائش موجود ہے، تاہم محرم کے بغیر خاتون کے لیے حج کی گنجائش بعض شرائط سے مشروط ہے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ والدین یا شوہر کی اجازت ملنے پر ہی کوئی عورت بغیر محرم حج کے لیے جاسکتی ہے، فقہ حنفیہ اور فقہ مبلی کے تحت محرم میسر نہ ہونے پر عورت پر حج فرض نہیں ہے، قابل اعتمادخواتین کی رفاقت حاصل ہونے پر کوئی عورت بغیر محرم حج پر روانہ ہو سکتی ہے۔ ترجمان اسلامی نظریاتی کونسل کا کہنا ہے کہ جسے سفر اور دوران حج کسی فساد یا خطرے کا اندیشہ نہ ہوتو اسی عورت بغیر محرم حج کے لیے جاسکتی ہے، تاہم ایسی عورت جس گروپ کے ہمراہ حج پر جائے اس کے بارے میں ضروری ہے کہ وزارت مذہبی امور پہلے مکمل چھان بین کرے اور گروپ ممبران کے بارے میں مکمل اطمینان ہونے کے بعد ہی کسی بھی عورت کو بغیر محرم حج پر جانے دیا جائے۔ اسی حوالے سے وزارت مذہی امور کے ترجمان نے کہا ہے کہ سعودی عرب کی جانب سے محرم کے بغیر حج کرنے کی اجازت کے باوجود پاکستانی خواتین رواں برس سابقہ قوانین کے تحت ہی حج کریں گی۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!