غیر قانونی مقیم غیر ملکیوں کی و اپسی کیلئے جامع حکمت عملی بنانے کا فیصلہ۔

نگراں وزیر داخلہ کے زیر صدارت اجلاس، پاک ایران بارڈر کراسنگ پلان جلد مکمل کرنے کی ہدایت۔
نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کیلئے اجلاس طلب تشدد پسندانہ کاروائیاں برداشت نہیں کی جائیں گی سرفراز بگٹی۔

اسلام آباد(وائس آف ہزارہ) نگراں وزیر داخلہ سرفراز احمد بگٹی نے کہا ملک میں غیر قانونی مقیم غیر ملکیوں کی وطن واپسی کیلئے جامع حکمت عملی مرتب کی جائے، تفصیلات کے مطابق منگل کونگراں وزیر داخلہ سرفراز احد بگٹی کی زیر صدارت وزیراعظم کی جانب سے دیئے گئے اہداف پر جائزہ اجلاس ہوا، سیکرٹری انسداد منشیات ڈویژن منیر اعظم، پیشل سیکرٹری داخلہ ندیم محبوب، ڈی جی اے این ایف میجر جنرل محمد انیق الرحمان ملک نے اجلاس میں شرکت کی، ڈی جی ایف آئی اے محسن حسن بٹ نیشنل کو آرڈینیٹر نیکٹا طاہر رائے اور دیگر اعلی افسران بھی اجلاس میں شریک ہوئے،نگراں وزیر داخلہ نے کہا ملک میں امن و امان کا قیام حکومت کی اولین ترجیح ہے، کسی بھی فرد یا گروہ کی جانب سے تشدد پسندانہ سرگرمیوں کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا، سرفراز احمد بگٹی نے کہا پاکستان میں غیر قانونی طور پر مقیم غیر ملکیوں کی وطن واپسی کیلئے جامع حکمت عملی مرتب کی جائے، پاک ایران سرحد پر تین مزید بارڈر کراسنگ کھولنے کے حوالے سے ایکشن پلان جلد از جلد مکمل کیا جائے، پولیس اور سکیورٹی اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے ان کے دائرہ کار کا واضح تعین انتہائی ضروری ہے، نگراں وزیر داخلہ نے کہا سول آرمڈ فورسز کی بہتری کیلئے جدید ترین تربیت اور وسائل فراہم کریں گے، غیر ملکیوں کو فول پروف سکیورٹی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!