پولیس کی بھاری نفری نے چائنیز کیمپ کو سیل کردیا۔

ایبٹ آباد:پولیس کی بھاری نفری نے چائنیز کیمپ کو سیل کردیا۔اس ضمن میں ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ جمعرات کے روز سول جج تھری کی ہدایت پر چائینز کیمپ سلہڈ کیمپ کو مقامی افراد سے معاہدہ کی پاسداری اور توسیع نہ کرنے کے مقدمہ میں مالکان اراضی کی موجودگی اور نشاندہی پر کاروائی عمل میں لائی گئی ہے۔اس موقعہ پر عدالتی بیلف محمد عقیل،طارق قریشی کے علاوہ پولیس کی نفری بھی موجود تھی،مالکان اراضی کے مطابق ہزارہ ایکسپریس وے کی تعمیر کے دوران سلہڈ کیمپ کی 17 کنال سے زاہد اراضی کو معاہدہ کے تحت کرایہ پر حاصل کیا گیا تھا جس کے معاہدہ کی مدت ختم ہونے کے بعد اس کی توسیع بھی نہیں کی گئی اور تعمیری منصوبہ کے دوران حفاظتی دیواروں کی تعمیر،پانی کی 35 سو فٹ سے زاہد سکیم متاثر ہونے کے بعد اس کی بحالی نہ ہو سکی،اور مختلف مقامات پر ملبہ کے ڈھیر بھی نہیں اٹھائے گئے،اس حوالے سے کیمپ انچارج داود نامی شخص نے بھی کسی قسم کے تعاون کے بجائے دھونس جمانے کی بھی کوشش کی ہے،مالکان اراضی تصدق عزیز،حسرت سعید کے مطابق معاہدہ کی رو گردانی پر مذاکرات کے باوجود معاملات حل نہ ہونے پر انصاف کے لئے عدالت سے رجوع کیا،جس پر متعلقہ فریق نے نوٹس ملنے کے باوجود عدالت میں حاضری نہیں کی،عدالت نے نوٹسز کے جواب نہ دینے پر مذکورہ کیمپ کو سربمعر کرنے کا حکم دے کر رپورٹ طلب کی تھی،عدالت کے احکامات کی پیروی میں کیمپ میں موجود ایف سی،پاک آرمی،پولیس اور نجی سیکورٹی ادارہ نے اپنی سیکورٹی کو کلوز کیا ہے اور اس موقع پر کیمپ میں بجلی پلانٹ،ہیوی مشینری،کرش پلانٹ،گاڑیاں،سیمنٹ گودام،اور لوہے کی شٹرنگ سمیت 27 آلاٹ سربمہر کئے گئے ہیں جس کی رپورٹ آج عدالت میں جمع کرائی جائے گی۔

Facebook Comments