نوبچوں کے باپ کو قتل کرکے، یتموں پر عرصہ حیات تنگ کردیاگیا۔

ایبٹ آباد(وائس آف ہزارہ)تھانہ حویلیاں کی چوکی رجوعیہ کی حدود میں نو بچوں کا باپ بے دردی سے قتل کرنے کے بعد بااثر ملزمان نے یتیم بچوں اور متاثرہ خاندان پر عرصہ حیات تنگ کر دیا، ڈھیری کیہال علاقہ غیر میں تبدیل، پولیس کے ناکے سوشل میڈیا تک محدود ڈھیری کہیال میں ملزمان اسلحہ لیکر دندنانے لگے،قتل کے بعد زبردستی راضی نامہ کرنے کیلیئے دباو ڈالنے کے ساتھ شدید حراساں کرنے کیلیئے ملزمان اسلحہ لیکر گاوں میں گھومنے لگے، پولیس ملزمان کو پکڑنے میں ناکام، ہمیں تحفظ فراہم کیا جائے اور ملزمان کو گرفتار کیا جائے مقتول کے بچوں اور متاثرہ خاندان کے افراد کی ایبٹ آباد پریس کلب میں پریس کانفرنس۔

گزشتہ روز ایبٹ آباد پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مقتول کے بچوں اور خاندان کے دیگر افراد بابر خان،عبداللہ، الیشہ،عبدالحمید خان،خان محمد،وحید نے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ دسمبر کو خاندانی عداوت پر گاوں کے بااثر ملزمان سرفراز،سجاد،ماشہر،اعظم خان نے بے دردی سے حنیف خان کو قتل کر دیا اور اس قدر خوف و حراس پھیلایا کہ نعش کو بھی کوء اٹھانے کو تیار نہیں تھا اور اب بھی یہ حالات ہیں کہ ملزمان کے ڈر سیلوگ متاثرہ خاندان سے ملتے تک نہیں اور پریس کانفرنس کیلئے جب ہم لوگ آرہے تھے تو کوئی گاڑی والا اپنی گاڑی میں بٹھانے کو تیار نہیں تھا۔جس وجہ سے گاوں سے چھپ کر پانچ گاڑیاں تبدیل کر کے گاوں سے ایبٹ آباد پہنچے ہیں، متاثرہ خاندان کے افراد نے مزید بتایا کہ ملزم پارٹی اور ہمارا تنازعہ جائیداد کیوجہ سے چلا آرہاتھا جسکا راضی نامہ علاقہ کی نامی گرامی شخصیات نے کروایا مگر ایک سال قبل ہونے والے راضی نامہ کے بعد ملزمان نے بیس روز قبل فائرنگ کرکے حنیف کو قتل کر ڈالاہماری صوباء حکومت اور پولیس حکام سے اپیل ہیکہ ہمیں تحفظ دینے کے ساتھ ساتھ ملزمان کوگرفتار کیا جائے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!