ہمارا فیس بک پیج

دفترخالی کرانے پر مقدس ٹاورکے مالکان اورکرائے دار میں جھگڑا۔ دونوں اطراف سے آٹھ افراد زخمی۔

ایبٹ آباد: دفترخالی کرانے پر مقدس ٹاورکے مالکان اورکرائے دار میں جھگڑا۔ دونوں اطراف سے آٹھ افراد زخمی۔ اس ضمن میں پولیس اور مقامی ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ مقدس ٹاور کے مالکان کی جانب سے برکلے اسٹیٹ ایڈوائزر کے مالک کبیر حسین ولد صادق حسین سکنہ میرپور کو دفترخالی کرنے کیلئے تین ماہ قبل نوٹس دیاتھا۔ تاہم انہوں نے دفترخالی نہیں کیا۔

جس پر ہفتہ کے روز مقدس ٹاور کے مالکان عزیز اللہ خان، فقیر اللہ خان، شفیع اللہ خان پسران ماجد خان ساکنان جناح آباد ایبٹ آباد اور تنویر احمد ولد محمد اکرم سکنہ سیاں دا کٹھہ برکلے اسٹیٹ پر پہنچے جہاں ان کا کبیرحسین کیساتھ جھگڑا ہوگیا۔ جس پر دونوں اطراف سے ایک دوسرے کو تشدد کا نشانہ بنایاگیا اور فائرنگ بھی کی گئی۔ جس کے نتیجے میں تنویر حسین ولد صادق حسین، بشارت حسین، کبیر حسین پسران صادق حسین ساکنان میرپور اور عثمان ولد محمد نذیر سکنہ اسلام کوٹ زخمی ہوگئے۔ جبکہ مقدس ٹاور کے مالکان بھی جھگڑے میں زخمی ہوگئے۔ جھگڑے کے دوران فائرنگ بھی کی گئی۔ تھانہ میرپور نے دونوں اطراف سے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے۔

شیئر کریں

Share on facebook
Facebook
Share on twitter
Twitter
Share on whatsapp
WhatsApp
Share on print
Print

اہم خبریں

error: Content is protected !!