تھانہ نواں شہر کی حدود میں ظالم سسرالیوں نے خاتون کو زہردے کر مارڈالا۔ معاملہ دبادیاگیا۔ پولیس خاموش۔

ایبٹ آباد: تھانہ نواں شہر کی حدود میں ظالم سسرالیوں نے خاتون کو زہردے کر مارڈالا۔ معاملہ دبادیاگیا۔ پولیس خاموش۔ اس ضمن میں ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ سنیانامی لڑکی کی شادی کچھ عرصہ قبل کالاپانی کے رہائشی ناصر نامی شخص کیساتھ ہوئی۔ ناصر جو کہ پہلے سے شادی شدہ تھا اور اس نے سنیاکیساتھ دوسری شادی کی۔ جبکہ دوسری جانب سنیا کا والد عرف جونی منشیات کے کیس میں جیل میں سزا کاٹ رہاہے۔ سنیا کی ماں لوگوں کے گھروں میں کام کاج کرکے زندگی کی گاڑی کھینچ رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق سنیاکے ساتھ اس کے شوہر اورسسرالیوں کا رویہ شادی کے بعد ٹھیک نہیں تھا۔ نہ صرف سنیا کا شوہر ناصر بلکہ اس کے سسرالی بھی آئے روز اس کیساتھ مارپیٹ کرتے رہتے تھے۔

ذرائع کے مطابق مبینہ طور پرسنیا کے سسرالیوں نے اسے زہر دے دیا۔ جس کی وجہ سے سنیا کی حالت غیرہوگئی۔ سنیا کو اہل محلہ نے بی ایچ یو کالا پانی پہنچایا۔ جہاں سے اسے پھر واپس سسرال لے گئے۔ جہاں زہر اس کے جسم میں پھیل گیا اور اس کی موت واقع ہوگئی۔ سنیا جوکہ ایک غریب گھرانے کیساتھ تعلق رکھتی ہے۔ سنیا کے سسرالیوں نے پولیس کو اطلاع دیئے بغیر اس کی نمازجنازہ ادا کروانے کے بعد اسے سپرد خاک کردیا۔جبکہ دوسری جانب مقامی لوگوں نے وائس آف ہزارہ کو مزید بتایاکہ سنیا کو مبینہ طور پر زہر دے کر قتل کیاگیاہے۔ پولیس یا حکومت خیبرپختونخواہ اس کے قتل کی ایف آئی آر درج کرکے خودمدعی بنے اور مقتولہ کو انصاف فراہم کیاجائے۔ کیونکہ اس کامقدمہ لڑنے والا کوئی نہیں ہے۔

Facebook Comments