دانتوں کاعلاج کرانیوالی لڑکی کو ڈاکٹر نے اغواء کے بعداجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

ہری پور(وائس آف ہزارہ/یاورحیات)ڈاکٹرنے دوست کے ہمراہ سترہ سالہ لڑکی کو اغواء کرنے کے بعداجتماعی زیادتی کرڈالی زیادتی کے بعد ملزمان لڑکی کو رات کے اندھیرے میں گاؤں کے ویرانے میں پھینک کر فرار پولیس نیمیڈیکل رپورٹ کے بعد ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے مرکزی ملزم ڈاکٹروقاص کو گرفتار کرلیاوقوعہ میں استعمال ہونے والا اسلحہ گاڑی بھی قبضے میں لے لی لڑکی ڈاکٹر کی مریضہ تھی جوکہ اپنے دانتوں کا علاج کروارہی تھی زرائع کے مطابق نواحی علاقہ کڑچھ میں اغواء و زیادتی کیس میں ملوث ملزم ڈاکٹر وقاص کو پولیس نیڈرامائی انداز میں گرفتار کر لیاملزم ڈاکٹر وقاص کا عدالت سیدو روزہ یوم حراست پولیس حاصل کرلیا گیا ہیمقدمہ میں استعمال ہونے والا پستول بھی برآمدہوا ہے جس کا لائسنس نہ ہونے پر ملزم ڈاکٹر وقاص کے خلاف مزید 15AA اسلحہ آرڈینس کے تحت بھی مقدمہ درج ہوچکا ہے۔

زرائع نے بتایا ہے کہ صدر پولیس اسٹیشن کی حدود میں گزشتہ روز سترہ سالہ لڑکی مسماۃ (ر) کے ساتھ اغواء زیادتی کا واقع رونما ہوا جس کی ایف آئی آر صدر پولیس اسٹیشن میں درج کی گئی جس پر پولیس نینیدو ملزمان ڈاکٹر وقاص اور بلال کے خلاف 365/376/34 کے تحت صدر پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کیاواقع کا فوری نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او ہری پور کاشف ذوالفقار نے ڈی ایس پی سرکل صدر سجاد خان، ایس ایچ او تھانہ صدر امتیاز خان اور تفتیشی افسران کو مقدمہ میں نامزد ملزمان کی فوری گرفتاری کے احکامات جاری کئے ڈی ایس پی صدر کی نگرانی ایس ایچ او تھانہ صدر نے ہمراہ تفتیشی افسران و دیگر نفری پولیس کے ملزمان کی جلد گرفتاری کے لئے مختلف مقامات پر کاروائیاں کرتے ہوئے مقدمہ میں نامزد مرکزی ملزم ڈاکٹر وقاص ولد خادی سکنہ محلہ بابو ہری پور کو گرفتار کرکے موقع پرسے ملزم سے ایک تیس بور پستول بھی برآمد کیاپستول سے متعلق کوئی کوائف یا لائسنس نہ ہونے پر زیر دفعہ 15AA اسلحہ آرڈیننس کے تحت بھی مقدمہ درج کرلیا۔

مزید تفتیش کے لئے ملزم کو تفتیشی افسر کیحوالے کیاانچارج انوسٹی گیشن تھانہ صدر سجاد خان نے گزشتہ روز ملزم کو بغرض حراست بعدالت جوڈیشل مجسٹریٹ پیش کرکے دوروزہ حراست پولیس حاصل کی جس سے مزید تفتیش جاری ہے.مقدمہ میں نامزد ملزم کا دوسراساتھی بلال ولد محمد شفیق سکنہ ڈوئیاں خشکی کی گرفتاری کے لئے مختلف مقامات پر چھاپہ زنی کا عمل جاری ہی تھا کہ شاطر ملزم نے عدالت سے عبوری ضمانت کروا لی ہے زرائع نے انکشاف کیا ہے کہ شہر کے وسط میں واقع مرکزی ملزم ڈاکٹروقاص کا کلینک ہے جہاں سترہ سالہ لڑکی اپنے دانتوں کا علاج کروانے آتی رہی ملزم نے موبائل نمبر لے کر لڑکی سے دوستی کی اور بعدازں بہلا پھسلا کر لڑکی کو رات شادی کی تقریب سے لڑکی کو ساتھ گاڑی میں لے گے جہاں ساری رات مرکزی ملزم ڈاکٹر بلال اپنے ساتھی بلال کے ساتھ لڑکی سے اجتماعی زیادتی کرتا رہا اور حالت خراب ہونے پر گاؤں کے ویرانے میں پھینک کر فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا تھا ادھرشہریوں نے دونوں ملزمان کاسرکاری ہسپتال سے ملازمت سے برخاست سمیت نجی کلینک بھی بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے یاد رہے کہ دونوں ملزمان سرکاری ہسپتالوں میں ڈینٹل ٹیکنیسن ہیں جوکہ ایک ملزم ہری پور ہسپتال دوسرا خان پور ہسپتال میں تعینات ہیں۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!