وزیراعظم آمد۔ سیکورٹی کے ناقص انتظامات۔ متعددگاڑیاں چوری کرنے کی کوشش۔جیبیں کٹ گئیں۔ کمشنر ہزارہ نے رشتہ داروں میں دعوت نامے تقسیم کردیئے۔

ایبٹ آباد: وزیراعظم آمد۔ سیکورٹی کے ناقص انتظامات۔ متعددگاڑیاں چوری کرنے کی کوشش۔جیبیں کٹ گئیں۔ کمشنر ہزارہ نے رشتہ داروں میں دعوت نامے تقسیم کردیئے۔ اس ضمن میں ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ ہزارہ ایکسپریس وے شاہ مقصود تا مانسہرہ کی افتتاحی تقریب کھوکھرمیرا حویلیاں انٹرچینج پر منعقد کی گئی۔ اس تقریب کیلئے سیکورٹی کے انتہائی ناقص انتظامات کئے گئے تھے۔

وزیراعظم عمران خان کے جلسہ کا پنڈال ایک اونچی جگہ پر بنایاگیاتھا۔ جوکہ شاہراہ ریشم سے گزرنے والی تمام گاڑیوں سے باآسانی دیکھا جاسکتاتھا۔ جوکہ ایک بہت بڑا سیکورٹی رسک بن سکتاتھا۔ جبکہ دوسری جانب پولیس اور حساس اداروں کی جانب سے سیکورٹی کے انتہائی ناقص انتظامات کئے گئے تھے۔ مہمانوں کیلئے مختص گاڑیوں کی پارکنگ میں سیکورٹی کیمرے اور سیکورٹی اہلکار تعینات نہیں کئے گئے تھے۔ اس چیز کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ہائی سیکورٹی زون میں متعدد گاڑیوں کو چوری کرنے کی کوشش کی گئی۔ چند گاڑیوں میں کارلفٹر چابیاں چھوڑ کر فرار ہوگئے۔ جس کی اطلاع ایس ایچ او تھانہ حویلیاں سردار رفیق کو دی گئی۔ لیکن موصوف نے کوئی ایکشن نہیں لیا۔ جبکہ دوسری جانب شدید رش کے دوران سیکورٹی اہلکاروں کی موجودگی میں متعدد افراد کی جیبیں بھی کاٹ لی گئیں۔ لیکن سیکورٹی اہلکار کسی جیب تراش کو بھی نہ پکڑسکے۔

جبکہ دوسری جانب نیشنل ہائی ویزاتھارٹی کی جانب سے تین سو سے زائد دعوت نامے کمشنر ہزارہ سیّدظہیر السلام کو دیئے گئے۔ لیکن موصوف نے زیادہ تردعوت نامے اپنے دوست احباب اور رشتہ داروں میں تقسیم کردیئے۔ ایبٹ آباد، مانسہرہ، ہری پور، بٹگرام کی کسی بھی اہم شخصیت نے ہزارہ ایکسپریس وے کی افتتاحی تقریب میں شرکت نہیں کی۔ کمشنر ہزارہ کی نااہلی اوردعوت نامے غلط لوگوں کودینے کی وجہ سے مقررہ وقت پر جلسہ گاہ میں لوگوں کی شدید کمی پیدا ہوگئی۔ کیونکہ کمشنر ہزارہ کی جانب سے جن لوگوں کو دعوت نامے دیئے گئے تھے ان میں سے اکثریت لوگ افتتاحی تقریب میں شریک ہی نہیں ہوئے۔ جس کی وجہ سے ایبٹ آباد یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی طالبات کے علاوہ سیکورٹی چیک پوائنٹ پر کھڑے لوگوں کو جلسہ گاہ میں جانے کی اجازت دے دی گئی۔

اس کے علاوہ کمشنر ہزارہ نے ہری پورپریس کلب، مانسہرہ پریس کلب اور ایبٹ آباد پریس کلب سمیت الیکٹرانک و پرنٹ میڈیا کے صحافیوں کو بھی دعوت نامے جاری نہیں کئے۔ کمشنر ہزارہ کی جانب سے دوکانیں چلانیوالے چند صحافیوں کو دعوت نامے جاری کئے۔ لیکن یہ لوگ بھی اپنے دوکانوں پر کاروبار میں مصروف رہے اور ان میں سے کسی نے بھی افتتاحی تقریب میں شرکت نہیں کی۔ ہزارہ کے تین اضلاع کے الیکٹرانک و پرنٹ میڈیا کے صحافی بھی اس تقریب میں دعوت نامے نہ ہونے کی وجہ سے شرکت نہ کرسکے۔ جس پر صحافی برادری نے شدید احتجاج کیاہے۔

Facebook Comments