محکمہ وائلڈ لائف کے نیم حکیموں نے قیمتی چیتے کی جان لے لی۔

ایبٹ آباد: محکمہ وائلڈ لائف کے نیم حکیموں نے قیمتی چیتے کی جان لے لی۔ شہریوں نے محکمہ وائلڈ لائف کیخلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کردیا۔ اس ضمن میں ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ چند روز قبل یونین کونسل پلک بکوٹ کے علاقے سے ایک زخمی چیتے کو پکڑلیا۔چیتے کوپکڑنے کے دوران پتھر اور ڈنڈوں کا استعمال مقامی لوگوں نے کیا۔ جس سے چیتا مزید زخمی ہوگیا۔ ذرائع کے مطابق محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکاروں نے زخمی چیتے کو ڈاکٹرکے پاس لے جانے بجائے اس کا خود ہی علاج شروع کردیا۔

محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکار خود ہی چیتے کے جسم پر مرہم پٹی کرتے رہے اورکسی اہلکار نے زخمی چیتے کے جسم سے خون نکلنے سے روکنے کیلئے خود ہی سوئی دھاگے سے ٹانکے لگادیئے۔ ذرائع کے مطابق محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکاروں نے زخمی چیتے کو بے ہوشی کی جو دوا دی۔ وہ ری ایکشن کرگئی۔ جس کی وجہ سے ہفتہ کے روزقیمتی چیتے کے موت واقع ہوگئی۔ محکمہ وائلڈ لائف کے اہلکاروں نے چیتے کا پوسٹمارٹم کراکے اپنی جان چھڑالی۔ ایبٹ آباد سمیت ہزارہ بھر کے شہریوں نے محکمہ وائلڈ لائف کے افسران اور اہلکاروں کی غفلت اور علاج نہ کرانے پر ایک قیمتی چیتے کی موت پر خیبرپختونخواہ حکومت سے ذمہ داروں کیخلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیاہے۔

Facebook Comments