شوہرسے طلاق کا دعویٰ دائرکرنے کے بعد سنگدل عورت نے اپنی حقیقی بیٹی کو گولی مارکرقتل کردیا۔

ایبٹ آباد(پولیس پریس ریلیز)یکم اکتوبر کو تھانہ حویلیاں کی حدود چوکی رجوعیہ کے علاقہ ڈھیری کیہال میں 13 سالہ طیبہ بتول کو اسلحہ آتشین سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا تھا جس کی والدہ مسماۃ گلناز بی بی زوجہ راشد نے تھانہ حویلیاں میں اپنے خاوند راشد اور اس کے بھتیجے احمد نواز اور ایک شخص اسم و مسکن نامعلوم کے خلاف رپورٹ درج کروائی جس پر مقدمہ علت 980 مورخہ 01 اکتوبر 2019 جرم 302/34 پی پی سی تھانہ حویلیاں درج رجسٹرڈ ہوا۔

مقامی پولیس نے فوری طور پر مقتولہ طیبہ بول کا پوسٹ مارٹم کروایا مدعیہ مقدمہ نے پوسٹ مارٹم کے بعد اپنی بیٹی طیبہ بتول کی نعش میونسپل کمیٹی کے حوالہ کی اور خود ڈھیر ی کیہال چلی گی اور کسی قسم کی کوئی دلچسپی نہ لی مسمات گلناز بی بی جس کا خاوند ہریپور پھراہاڑی گاوں ضلع ہریپور کا رہائشی ہے اپنی بیٹی طیبہ بتول کے قتل ہونے کی خبر سن کرازخود تھانہ صدر ہری پور چلا گیا تھا ضلعی پولیس سربراہ جاوید اقبال کی ہدایت پر ایس پی انوسٹیگیشن عزیز خان آفریدی کی زیر نگرانی مقدمہ ہذا کی تفتیش کو جدید سائنسی بنیادوں پر آگے بڑھاتے ہوئے راشد، خاوند گلناز بی بی کا CDR حاصل کیا جس کی موجودگی بوقت وقوعہ ہریپور پائی گئی گلناز بی بی کا اپنے خاوند سے عرصہ 5 ماہ سے گھریلو تنازعہ چلا آ رہا تھا جس پر گلناز بی بی نے 2 مہینہ قبل اپنے خاوند کے خلاف تنسیخ نکاح کا دعوی بھی ہریپور عدالت میں کیا ہوا تھا۔

اس وقوعہ سے 2 روز قبل حویلیاں گاوں کے محلہ بیگہ میں گلناز بی بی کے رشتہ داروں کے گھر دونوں میاں بیوی کے درمیان توں تکرار اور گالم گلوچ بھی ہوئی جس پر گلناز بی بی نے خاوند راشد کے خلاف رپورٹ کی جس پر مقامی پولیس نے راشد کو /151 107 ض ف میں گرفتار کر کے چالان عدالت کیا زوہیب ولد عجائب، گلناز بی بی جو کہ گلناز بی بی کا رشتہ دار ہے، گلناز بی بی اور اس کی بیٹی طیبہ بتول کو اپنے گھر ڈھیری کیہال لے گیا تھا مورخہ 01اکتوبر 2019کو گلناز بی بی نے زوہیب کے پستول سے فائر کر کے دختر طیبہ بتول کو قتل کیا اور ذوہیب کی ایماء پر گلناز بی بی نے اپنے خاوند راشد اور اس کے بھتیجے احمد نواز اور ایک شخص اسم و مسکن نامعلوم کے خلاف رپورٹ کروائی تفتیش کے دوران راشد خاوند گلناز کا کوئی رول نہ پایا گیا، گلناز بی بی کو شامل تفتیش کر کے انٹاروگیٹ کیا جس نے دختر طیبہ بتول کو زوہیب کے پستول سے قتل کرنا بتلایا جو اس کی نشاندہی پر پستول تیس بور برآمد ہو کر موقع کی کاروائی ہوئی ذوہیب خان کو جرم چھپانے کے جرم 201/202پی پی سی اور بلا لائیسنس پستول رکھنے کے جرم 15-AAKPKمیں گرفتار کیا گیا۔

ضلعی پولیس سربراہ جاوید اقبال اور ایس پی انوسٹگیشن عزیز خان آفریدی نے مقدمہ میں انتہائی قلیل وقت میں ملزمان کی گرفتاری اور مقدمہ کی تفتیش کے دوران حقیقیت سامنے لانے پر ڈی ایس پی حویلیاں، ایس ایچ او حویلیاں اور انچارج شعبہ تفتیش سمیت پوری ٹیم کی کارکردگی کو سراہا ہے۔

Facebook Comments