کینٹ الیکشن: قسمت کی دیوی پی ٹی آئی اورپیپلزپارٹی پر مہربان۔ وائس چیئرمین کس جماعت کا ہوگا؟ سیاسی درجہ حرارت میں اضافہ۔

ایبٹ آباد(وائس آف ہزارہ)کینٹ بورڈ الیکشن مخصوص نشستوں پر الیکشن مقابلہ 4/4 سے برابر ہونے کے باعث فیصلہ قرعہ اندازی پر قسمت کی دیوی پی پی پی اور پی ٹی آئی پر مہربان ایک ایک مخصوص نشست حاصل کر لی۔ذرائع کے مطابق کینٹ بورڈ وائس چیئرمین کی دوڑ نیا رخ اختیار کر گئی گزشتہ روز کینٹ بورڈ الیکشن کے بعد مخصوص نشست کے لیے انتخابات کے لیے پولنگ کا عمل ہوا جس میں پی ٹی آئی،مسلم لیگ ن کے امیدوارں نے اپنا اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔جس کے بعد ووٹوں کی گنتی کے دوران پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار ناصر خان نے پی پی پی کے مخصوص نشست کے امیدوار کے حق میں غلطی سے ووٹ دیا۔ اسی طرح پی پی پی کے امیدوار فواد خان ووٹ بھی مسترد کر دیا گیا۔

جس کے بعد مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کے درمیان مقابلہ 4/4 ووٹ سے برابر ہو گیا جس پر مخصوص نشست کی سیٹوں کا فیصلہ قرعہ اندازی کے ذریعے کیا گیا جس میں قسمت کی دیوی پاکستان تحریک انصاف اور پاکستان پیلز پارٹی پر مہربان رہی اور دنوں نے ایک ایک مخصوص نشست حاصل کر لی تاہم مسلم لیگ ن کا امیدوار پہلے ہی الیکشن ہار گیا تھا موجودہ صورتحال کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن نے کینٹ الیکشن میں پہلے ہی پانچ سیٹیں حاصل کر چکی ہے اسطرح پاکستان تحریک انصاف کے پاس بھی ایک مخصوص نشست جیتنے کے بعد پانچ سیٹیں ہو گئی ہیں دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کے پاس بھی مخصوص نشست جیتنے کے بعد پیپلزپارٹی کے پاس بھی دو سیٹیں ہوگئی ہیں۔ جس پر کینٹ بورڈ وائس چیئرمین نئی کے لیے ہونے والا الیکشن بھی نیا موڑ اختیار کرگیا موجودہ صورتحال کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کا ووٹ چیئرمین کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے اگر پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار پاکستان مسلم لیگ نون یا پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار کو وائس چیئرمین کا ووٹ دیتے ہیں تو وائس چیئرمین اس پارٹی کا منتخب ہو جائے گا ذرائع کے مطابق پاکستان مسلم لیگ نون اور پاکستان تحریک انصاف کی ضلعی قیادت نے پاکستان پیپلزپارٹی کے امیدوار کے گھر ڈیرے ڈال رکھے ہیں قسمت کی دیوی سب پر مہربان ہوتی ہے یہ کہنا قبل از وقت ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!