محکمہ سوئی گیس کے افسران نے رشوت نہ ملنے اورحکم امتناعی کے باوجودنگکی روڈپر نئی آبادی کی گیس لائن منقطع کردی۔

ایبٹ آباد(وائس آف ہزارہ) محکمہ سوئی گیس کا عملہ صارفین کیلئے درد سر بن گیا قانون اپنا حکومت اپنی راج اپنا بنا لیا ہے محکمہ سوء گیس کے اہلکاروں نے شاہراہ ریشم سبزی منڈی موڑ پل کے نیچے سے نگکی روڈ نئی آبادی کو گیس کی سپلائی لائن کاٹ ڈالی مین سپلائی لائن کاٹنے سے مقامی آبادی کے صارفین کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے مین سپلائی لائن بغیر کسی نوٹس کے کاٹنے کے خلاف صارفین سراپہ احتجاج بن گئے ہیں علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ محکمہ سوئی گیس کے اہلکاروں نے مبینہ طور پر بھاری رشوت لیکر آبادی کو گیس کی سپلائی دی ہے اس آبادی میں اب تک ایک میٹر نصب کیا گیا ہے جبکہ دیگر آبادی کے گھروں کو تاحال میٹر نہی لگا کر دیئے گئے ہیں سوئی گیس کے اہلکاروں نے آبادی کے مکینوں سے مبینہ طور پر مزید رشوت وصولی کا عندیہ دے رکھا ہے۔

رشوت نا دینے کی صورت میں مین سپلائی بند کرنے سمیت میٹر اتارنے کی کاروائی کا عندیہ دیا جا رہا ہے۔نگکی روڈ نئی آبادی کے ایک مکین نے عدالت سے محکمہ سوئی گیس کے خلاف سٹے آرڈر لے رکھا ہے مگر سٹے آرڈر کے باوجود محکمہ سوئی گیس نے مین سپلائی لائن کاٹ ڈالی صارف نے عدالت سے دوبارہ رجوع کیا جس پر عدالت نے فوری گیس سپلاء بحال کرنے کا حکم دیا عدالتی حکم پر دوبارہ گیس سپلائی بحال کی گئی ہے شاہراہ ریشم سبزی منڈی موڑ پل سے مین سپلائی لائن کاٹنے سے جہاں صارف کو مشکلات گیس کی عدم فراہمی سے ہوئی تو وہاں ہی گیس سپلائی لائن کاٹنے سے بڑا حادثہ ہو سکتا تھا محکمہ سوئی گیس کے عملہ نے اپنا قانون بنا لیا ہے پہلے گیس فراہم کی جاتی ہے بھاری رشوت کے عوض اور دوبارہ رشوت طلب کی جاتی ہے صارفین کو دونوں ہاتھوں سے بلیک میل کیا جاتا ہے آبادی کے مکینوں نے حکام بالا سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ان کا کہنا ہے کہ محکمہ سوئی گیس کے اس اقدام کے خلاف انکوائری کی جائے اور ایسے اقدامات کرنے والوں کے خلاف سخت کارواء عمل میں لائی جائے تاکہ صارفین کو ایسی بلیک میلنگ سے بچایا جا سکے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!