اغواء کی جانیوالی لڑکی کوقتل کرکے پھینک دیاگیا۔ والد بھی ٹریفک حادثے میں جاں بحق۔

مانسہرہ(وائس آ ف ہزارہ)اغواء کی جانیوالی لڑکی کوقتل کرکے پھینک دیاگیا۔ والد بھی ٹریفک حادثے میں جاں بحق۔ اس ضمن میں ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ ایبٹ آباد اورمانسہرہ کے درمیان واقع گاؤں داتہ کے رہائشی صلاح الدین کی بیٹی نادیہ کونامعلوم افراد نے اغواء کرلیا۔ صلاح الدین اپنی بیٹی کے اغواء کا مقدمہ درج کروانے تھانہ صدر مانسہرہ گیا۔ تاہم بدقسمت شخص حادثے میں جاں بحق ہوگیا۔ پولیس نے نادیہ کی بازیابی میں کوئی کردار ادا نہیں کیا۔ گزشتہ روز اغواء کاروں نے نادیہ کو گولیاں مار کر اس کی لاش کو بیدری سے پھینک کر فرار ہوگئے۔ ذرائع کے مطابق نادیہ کی لاش کو پھینکنے والے سوزوکی کیری ڈبہ کا نمبر بھی سوشل میڈیا پر گردش کر رہا ہے۔

اغواء کار ایف آئی آر میں نامزد ہونے کے باوجود نامعلوم ہیں۔مقتولہ کا والد انصاف کی تلاش میں قبر میں اتر گیا اور اب مغویہ بھی مقتولہ ہو چکی۔کسی کو اس سے کوئی غرض نہیں کہ مغویہ کو اغواء کر کے کس اذیت سے گزارہ ہو گا مگر مجرموں کی دیدہ دلیری دیکھیے کہ مغوی لڑکی کو دن دیہاڑے سرے عام گولیاں مار کر قتل بھی کر دیا۔ پولیس کو اس پر سخت ایکشن لینا چاہیے تاکہ ہزارہ میں قانون کی عملداری کو یقینی بنایا جاسکے۔

مانسہرہ۔دھمن دن دیہاڑے دوشیزہ قتل کیس نیا رخ اختیارکر گیا۔پولیس نے 16 فروری کو داتہ سےاغواء ہونے والی ساتویں جماعت کی طلبہ کو مقتولہ قرار دے کر لاش ورثاء کے حوالے کردی.ورثاء میت کو روتے پیٹتے گھر لیکر گئےاور بعد ازاں مبینہ طور پر اغواء ہونے والی دوشیزہ نے ماموں کو فون کر کے بتایا کہ میں تو زندہ ہوں۔مقتولہ کی نعش داتہ سے واپس پولیس کے حوالے کر دی ۔مقتولہ کوئی اور خاتون ہے ہے نعش کنگ عبداللہ ہسپتال کے مردہ خانہ منتقل۔۔۔ہم شکل ہونے کی وجہ سے نعش کو پہچاننے میں غلط فہمی ہوٸی مغویہ کے ورثاء کا موقف۔جبکہ آج قتل ہونے والی دوشیزہ کی عمر 22,23 سال جبکہ اغواء ہونے والی بچی کی عمر 14 سال ہے۔پولیس کی تفتیشی ٹیم کو 22 توپوں کی سلامی

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!