قربانی کے جانوروں کی آسمان سے باتیں کرنے لگیں۔سفید پوش قربانی سے محروم ہو گئے۔

دو من کا جانور ایک لاکھ، تین من کا ڈیڑھ لاکھ،چار من کے جانور کی دو لاکھ قیمت۔خریدار قیمتیں گرنے کے انتظار میں۔
حویلیاں، ہری پور اور ایبٹ آباد کی منڈیوں میں ہزاروں جانور موجود قیمتیں سن کر ہی گاہکوں کے ہوش اڑنے لگے۔
ایبٹ آباد(وائس آف ہزارہ) مہنگائی کے طوفان کے باعث جانوروں کی خریداری سفید پوش و تنخواہ دار طبقے کے لئے آزمائش بن کر رہ گئی عید میں تین سن سے بھی کم دن باقی رہنے کے باعث ہر روز جانوروں کی آسمان سے باتیں کرتی ہوئی قیمتوں نے خریدار کو دن میں تارے دکھا دیئے ہیں۔ حویلیاں اور ایبٹ آباد کی منڈیوں میں دو من کا جانور ایک لاکھ، تین من کا ڈیڑھ لاکھ،چار من کے جانور کی دو لاکھ قیمت مانگی جانے لگی جبکہ خریدار قیمتیں گرنے کے انتظار میں بیٹھ گئے ہیں کیونکہ ان قیمتوں پر جانور خرید ناممکن ہے مویشی منڈیوں میں قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہیں اور ہر روز ان کے دام بڑھ رہے ہیں۔ جس سے سنت ابراہیمی کی ادائیگی خواہشمند شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اتوار کے روز بھی منڈیوں میں خریدار نہ ہونے کے برابر تھے۔مہنگائی کے طوفان کے باعث جانوروں کی قیمتیں کم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہیں۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

نیوز ہزارہ

error: Content is protected !!