ہمارا فیس بک پیج

پرائیویٹ سکولز کے ٹیچرز آدھی تنخواہ سے محروم۔ پوری تنخواہ فیسوں کیساتھ مشروط کردی گئی۔

ایبٹ آباد:پرائیویٹ سکولوں کی ٹیچرز سفید پوشی کے بھرم تلے دب گئیں۔سکول بند ہونے کے ساتھ ہی پرائیویٹ سکولوں کی استانیوں کی تنخواہیں رک گئیں۔سکول انتظامیہ کی طرف سے آدھی تنخواہ وہ بھی فیسیں آنے تک مشروط ہو کر رہ گئی۔ذرائع کے مطابق لاک ڈاؤن کے دوران سکول بند ہونے سے پرائیویٹ سکول کی استانیاں متاثر ہوئیں۔جن میں کثیر تعداد اپنے گھروں کے چولہے جلانے میں اہم کردار ادا کرتی تھیں۔ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی کے سبب سفید پوش طبقہ اپنی بہن بیٹیوں کو سکول بھیج کر اپنے گھر کا سرکل چلا لیتا تھا مگر جب سے لاک ڈاؤن شروع ہوا ہے۔یہ لوگ سفید پوشی کے بھرم تلے دب کے رہ گئے ہیں۔سکول انتظامیہ آدھی تنخواہ کا وعدہ کرتی ہے وہ بھی فیسیں آنے تک۔اب سوال یہ ہے کہ معاشرہ کا یہ معمار طبقہ کس کے سہارے پر ہے؟کیا حکومت ان مشکل حالات میں ان کی دادرسی کا کوئی پروگرام رکھتی ہے؟یا یہ پہلے سے پسا ہوا طبقہ ایک بار پھر سے سکول مالکان کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا جائے گا؟

شیئر کریں

Share on facebook
Facebook
Share on twitter
Twitter
Share on whatsapp
WhatsApp
Share on print
Print

اہم خبریں

error: Content is protected !!