ہمارا فیس بک پیج

زمین پھٹی نہ آسمان گرا:دو افراد نے مل کرتیرہ سالہ بچے کو جنسی حوس کا نشانہ بنا ڈالا۔

ایبٹ آباد:زمین پھٹی نہ آسمان گرا تھانہ ڈونگا گلی کی حدود نگری بالا میں دو افراد نے مل کر 13 سالہ بچے کو جنسی حوس کا نشانہ بنا ڈالا،متاثرہ بچے کے والد کی اعلی حکام سے انصاف کی اپیل،ملزمان کے خلاف مقدمہ درج تاحال ملرزمان گرفتار نہ ہو سکے،ذرائع کے مطابق دو روز قبل تھانہ ڈونگا گلی کی حدود میں قوم لوط کے پیرکاروں نے ایک اور بچے کو جنسی حوس کا نشانہ بنایا،متاثرہ بچے کے والد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرا بیٹا گزشتہ روز محلے میں ہی ایک گھر سے دودھ لینے گیا اور راستے میں دو افراد باسط ولد خانیزمان اور سیاب ولد خانیزمان گن پوائینت کر میرے بیٹے کو سرک کے قریب ہی واقع کھتوں میں نے گئے اور وہاں زبرستی جنسی تشدد کا نشانہ بنایا اور موقع سے فرار ہو گئے۔

متاثرہ بچے کے والد کا مزید کہنا تھا کہ مجھے انصاف فراہم کیا جائے اور اگر انصاف فراہم نہ کیا گیا تو پارلیمنٹ کے سامنے خود کو آگ لگا لوں گا،تھانہ ڈونگا گلی پولیس نے دفعہ 377 کے تحت مقدمہ درج کر لیا تاہم پولیس کی روایتی سستی کی وجہ سے ملزمان اب تک گرفتار نہ ہو سکے،زرائع کے مطابق ملزمان باسط،سیاب اور ان کے والد خانیزمان کا سابقہ ریکارڈ بھی قانون شکنی سے بھرا پڑا ہے اور تینوں باپ بیٹا متعدد چوری ڈکیتی اور دیگر واداتوں میں ملوث رہ چکے ہیں اور پولیس بھی ان پر ہاتھ ڈالنے سے قاصر ہے،ڈی آء جی ہزارہ اور ڈی پی او ایبٹ آباد سے اپیل ہے کہ وہ اس واقعے کا فوری نوٹس لیں اور ملزمان کو جلد از جلد گرفتار کر کے عبرناک سزا دلواء جائے تا کہ جنسی تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعات کو روکا جا سکے۔


شیئر کریں

Share on facebook
Facebook
Share on twitter
Twitter
Share on whatsapp
WhatsApp
Share on print
Print

اہم خبریں

error: Content is protected !!