ہمارا فیس بک پیج

شہزاد عرف چڑیانے بھائی اوردیگرملزمان کی مدد سے ایک بھائی کو قتل دوکو شدیدزخمی کردیا۔شہزادچڑیابھائی سمیت گرفتار۔

ایبٹ آباد: شہزاد عرف چڑیانے بھائی اوردیگرملزمان کی مدد سے ایک بھائی کو قتل دوکو شدیدزخمی کردیا۔شہزادچڑیابھائی سمیت گرفتار۔ سینالیبارٹری چوک خون میں نہلادیاگیا۔ شہزاد عرف چڑیا کے ہاتھوں پہلے بھی کئی افرادقتل ہوچکے ہیں۔ پولیس کی ناقص تفتیش کی وجہ سے ملزم چند سال بعد باہرنکل آتاہے: چیف جسٹس اور انسپکٹرجنرل خیبرپختونخواہ پولیس سے مقتولین کے ورثاء کا سخت کارروائی کا مطالبہ۔

اس ضمن میں ذرائع نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ چالیس سالہ عبدالوحید ولد محمد صدیق جوکہ کٹلی پھلکوٹ کا رہائشی ہے اور آج کل یہ محنت مزدوری کی وجہ سے اپر کنج ایبٹ آباد میں نقل مکانی کرکے رہائش پذیر ہیں۔ عبدالوحید نے پولیس چوکی ڈی ایچ کیوہسپتال میں رپورٹ درج کراتے ہوئے بتایاکہ ہماری سینالیبارٹری چوک میں سبزی کی دوکان ہے۔ جہاں سے ہم اپنی گزر بسر کرتے ہیں۔ میرے چھوٹے بھائی منیر اور شہزاد عرف چڑیا کے درمیان گزشتہ روز تلخ کلامی ہوئی تو ہم نے منت سماجت کرکے معاملہ رفع دفع کردیا۔ کیونکہ شہزاد عرف چڑیا نے پہلے بھی کئی افراد کوقتل کرچکاہے۔ یہ گزشتہ سال جیل سے باہر آیا۔

آج بروز جمعہ دن ساڑھے بارہ بجے اپنے بھائیوں عبدالقدیر، ظہیر اور خالہ زاد بھائی ساجد کے اپنی دوکان سینا لیبارٹری چوک میں موجود تھا کہ شہزاد عرف چڑیا، اس کا بھائی شیردل عرف شیری پسران سعیدساکنان کھولہ کیہال اپنے چچا جس کا نام نہیں آتا اور دیگر دواشخاص جن کے نام نامعلوم ہیں بامسلح میری دوکان میں گھس گئے اور آتے ہی گالم گلوچ شروع کردی۔شہزاد عرف چڑیا نے اندھادھند فائرنگ شروع کردی۔ جس سے ایک گولی میرے بھائی عبدالقدیر کو گردن میں لگی۔ اسی طرح دوسرے بھائی ظہیر کو شیری نے آہنی کلپ کے وار کرکے زخمی کردیا۔ ان کے چچا نے بھی آہنی کلپوں سے زخمی کیا اور اندھا دھند فائرنگ شروع کردی۔ جس کے نتیجے میں میرا بھائی عبدالقدیرموقع پر ہی قتل ہوگیا۔ جبکہ میرادوسرابھائی بتیس سالہ ظہیر، خالہ زاد بھائی تیس سالہ ساجد ولد مہابت خان سکنہ کیہال فائرنگ سے شدیدزخمی ہوگئے۔ جن کو ڈی ایچ کیوہسپتال منتقل کردیاگیاہے۔

واقع کی اطلاع ملتے ہی بہت بڑی تعداد میں مقامی لوگ ڈی ایچ کیوہسپتال میں جمع ہوگئے۔ مقتول عبدالقدیر کی لاش پوسٹمارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کردی گئی۔ جبکہ ظہیر اور ساجد کی حالت بھی تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ تھانہ کینٹ میں ملزمان کیخلاف قتل اقدام قتل کی دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کرلی گئی ہے۔ ایس پی شعبہ تفتیش اشتیاق خان نے وائس آف ہزارہ کو بتایاکہ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے شہزاد عرف چڑیا اور اس کے بھائی شیردل عرف شیری کو گرفتار کرلیاہے۔ جبکہ دیگرملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔

شیئر کریں

Share on facebook
Facebook
Share on twitter
Twitter
Share on whatsapp
WhatsApp
Share on print
Print

اہم خبریں

error: Content is protected !!